The news is by your side.

’ٹرانسجینڈرز بل پر بےبنیاد پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے‘

وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے کہا ہےکہ ٹرانس جینڈرز سے متعلق بل پر بےبنیاد پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ ٹرانسجینڈربھی انسان ہیں ان کے بھی حقوق ہیں پارلیمان میں بل پیش ہونے کے 2سال بعد کچھ شکایتیں سامنےآئیں ہر قانون جو پاس ہوتا ہے اس میں کوئی نہ کوئی سقم آسکتاہے۔

اعظم نذیرتارڑ نے کہا کہ شکایت میں کہاگیا کہ اس بل کا غلط استعمال ہوسکتاہے ٹرانسجینڈرز کو حقوق دینا ریاست کی ذمہ داری ہے لیکن ٹرانس جینڈرز سے متعلق بل پر بےبنیاد پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹرانسجینڈرز کی وراثت کا معاملہ بھی اہم اس پر مولانا فضل الرحمان سے ملاقات ہوئی اور انہوں نے اپنی تجاویز پیش کی ہیں ساتھ ہی کامران مرتضیٰ کی انہوں نے ذمہ داری لگائی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ قوانین سے متعلق غلط خبریں اور معلومات پھیلانے کی اجازت نہیں دے سکتے ، کہا جارہا ہے کہ ٹرانسجیڈرز کا پورا کا پورا قانون غلط ہے لیکن ایسا نہیں ہے، قانون میں ٹرانسجیڈرز کے حقوق کا تحفظ کیا گیا ہے قانون میں جنسی ہراسانی کو جرم بنایا گیا ہے زبردستی بھیک منگوانے کو جرم قرار دیا گیا ہے اور اس پر سزائیں رکھی گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں