The news is by your side.

Advertisement

صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے ٹرمپ کو کس جانور سے تشبیہ دی؟

مشی گن: امریکی صدارتی الیکشن کے لیے ریاست ٹیکساس میں ارلی ووٹنگ کا اختتام ہو گیا، صدارتی الیکشن قریب آ گئے، امریکا میں انتخابی سرگرمیاں عروج پر پہنچ گئی ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ اور بائیڈن ووٹرز کو قائل کرنے کے لیے ایک کے بعد ایک ریاستوں کے دوروں پر ہیں، ایک دوسرے پر الزامات اور لفظی جنگ میں بھی تیزی آگئی ہے۔

صدارتی الیکشن میں اب تک 9 کروڑ 5 لاکھ سے زائد ووٹ کاسٹ کیے جا چکے ہیں، ڈاک کے ذریعے پونے 6 کروڑ سے زائد ووٹ کاسٹ کیے گئے ہیں، ٹرمپ نے ڈاک کے ذریعے ووٹنگ پر تحفظات کا اظہار کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ اس سے نتائج میں تاخیر کا خدشہ ہے، ادھر کانگریس، سینیٹ اور سٹی کونسلز کے انتخابات کے لیے بھی ووٹنگ جاری ہے۔

دریں اثنا، امریکی ریاست مشی گن میں انتخابی مہم کے دوران امریکی صدارتی امیدوار جوبائیڈن نے ٹرمپ کو پیوٹن کا پالتو کتا کہہ دیا ہے، بائیڈن نے کہا ٹرمپ روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے پالتو کتے کی طرح کام کرتا ہے، پیوٹن نے عراق میں امریکی فوجیوں کے سر کی قیمت مقرر کی تھی، اور ڈونلڈ ٹرمپ روسی صدر کو للکارنے میں خوف کا شکار تھے۔

موجودہ امریکی صدر ٹرمپ نے ریاست پنسلوانیا میں ایک ریلی سے خطاب میں کہا جوبائیڈن انتخابی جلسوں میں چیخ چیخ کر نفرت پھیلا رہا ہے، امریکی عوام کو جوبائیڈن پانچ عشروں سے تقسیم کر رہا ہے، بائیڈن کبھی بھی عوام کو متحدنہیں کر سکتا۔

انھوں نے کہا کرونا وائرس وبا کے حوالے سے تنقید کرتے ہوئے کہا بائیڈن آپ کے لوگوں، خاندانوں کو گھروں میں قید کر دے گا، بائیڈن کے دور اقتدار میں سڑکوں اور اسٹورز پر لوٹ مار ہو رہی ہوگی، بائیڈن چاہتے ہیں اسکولز ہوں نہ تہوار، ملک کا کوئی مستقبل نہ ہو۔

واضح رہے کہ امریکی صدارتی انتخابات 2020 منگل کے دن 3 نومبر کو منعقد ہو رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں