The news is by your side.

Advertisement

طیارہ حملے کے خوف سے امریکی حکام میں کھلبلی، بائیڈن آنا فاناً محفوظ مقام پر منتقل

واشنگٹن: طیارہ حملے کے خوف سے امریکی حکام میں کھلبلی مچ گئی، سیکیورٹی اہل کاروں نے جو بائیڈن اور ان کی اہلیہ کو آنا فاناً ساحلی گھر سے محفوظ مقام پر منتقل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ہفتے کو ایک چھوٹا نجی طیارہ غلطی سے نو فلائی زون میں داخل ہونے پر امریکی حکام میں کھلبلی مچ گئی، وائٹ ہاؤس نے کہا کہ طیارہ صدر بائیڈن کے بیچ ہاؤس کے اوپر سے ممنوع فضائی حدود میں اڑا، جس پر اہل کاروں نے انھیں اور خاتون اول کو فوری طور پر محفوظ مقام پر منتقل کیا۔

واقعے کے بعد امریکی صدر جو بائیڈن کی حفاظت میں غفلت کی خبریں منظر عام پر آنے لگیں، وائٹ ہاؤس نے کہا کہ ایک طیارہ اچانک ’نو فلائی زون‘ میں داخل ہو گیا تھا، جس کے پیش نظر سیکیورٹی ادارے الرٹ ہو گئے۔

یہ واقعہ ڈیلاویئر کے ریہوبوتھ بیچ پر پیش آیا، وائٹ ہاؤس کے ایک اہل کار نے واقعے کے بارے میں کہا کہ صدر اور ان کی اہلیہ محفوظ ہیں اور ان پر کوئی حملہ نہیں ہوا ہے، اہل کار نے بتایا کہ جو بائیڈن اور ان کی اہلیہ جل بائیڈن بعد میں اپنی رہائش گاہ پر واپس آ گئے۔

امریکی صدر کی حفاظت پر مامور سیکرٹ سروس نے بیان میں کہا کہ طیارہ غلطی سے محفوظ علاقے میں داخل ہو گیا تھا، سیکرٹ سروس کے ترجمان انتھونی گوگلیلمی نے کہا کہ پائلٹ مناسب ریڈیو چینل پر نہیں تھا اور ہدایات پر عمل نہیں کر رہا تھا۔

امریکی خفیہ سروس کے مطابق مذکورہ پائلٹ سے اس واقعے کے بارے میں پوچھ گچھ کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں