The news is by your side.

Advertisement

عوام کے حقوق کے تحفظ کے لیے آج ہم پھر سے ایک ہوگئے ہیں: بلاول بھٹو

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ عوام کے حقوق کے تحفظ کے لیے آج ہم پھر سے ایک ہوگئے ہیں، جمہوریت خطرے میں ہے، کوئی ایک سیاسی جماعت پاکستان کے مسائل کا حل اکیلے نہیں نکال سکتی۔

ان خیالات کا اظہار بلاول بھٹو آج مزار قائد سے متصل باغ جناح کراچی میں یوم سیاہ کے موقع پر منعقد کیے گئے اپوزیشن کے جلسے سے خطاب میں کر رہے تھے۔

پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ اس وقت صرف سیاست دان ہی نہیں بلکہ سیاست نشانے پر ہے، غربت نہیں غریب نشانے پر ہے، آج پارلیمان اور جمہوریت نشانے پر ہے، چند قوانین نہیں پورا آئین نشانے پر ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ گزشتہ سال 28 جولائی کو کراچی میں پارٹی میٹنگ بلائی تھی، اپوزیشن جماعتوں نے پارلیمنٹ کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا تھا، لیکن پیپلز پارٹی نے دھاندلی کے باوجود جمہوریت بچائی، ہم نے اپوزیشن کو کہا پارلیمنٹ میں آئیں، جمہوریت بچائیں۔

یہ بھی پڑھیں:  کراچی: اپوزیشن جماعتوں کا جلسہ، مختلف علاقوں میں بد ترین ٹریفک جام

انھوں نے مزید کہا کہ عمران خان نے کہا تھا صرف 6 ماہ دیں، پھر میں ہر چیز کا ذمہ دار ہوں گا، ہم نے ایک سال دیا ہے، ہر پاکستانی پریشان ہے، ملک تاریخی معاشی بحران سے گزر رہا ہے، سبسڈی چھین کر کسانوں کا معاشی قتل عام کیا جا رہا ہے۔

بلاول بھٹو نے 25 جولائی کو پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین دن قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم حکومت کے خلاف علم بغاوت بلند کر رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ہم نے ن لیگ کے ساتھ میثاق جمہوریت پر دستخط کیے، پاکستان کا متفقہ آئین بھٹو شہید نے مفتی محمود دیگر کے ساتھ مل کر بنایا، لیکن آج جمہوریت خطرے میں ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں