امریکی صدارتی انتخاب: دھرنا کب شروع ہورہا ہے؟ -
The news is by your side.

Advertisement

امریکی صدارتی انتخاب: دھرنا کب شروع ہورہا ہے؟

اسلام آباد: امریکی صدارتی انتخاب پر جہاں دنیا بھر سے مختلف آرا سامنے آرہی ہیں، وہیں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے بھی ٹوئٹر پر مضحکہ انداز میں ڈونلڈ ٹرمپ کی فتح کے خلاف ’دھرنے میں شرکت‘ کرنے کا عندیہ دیا۔

امریکی صدارتی انتخاب کے لیے پولنگ ختم ہوچکی ہے۔ مختلف ریاستوں سے نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے جس کے مطابق اب تک ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کو برتری حاصل ہے اور ان کے اگلے امریکی صدر منتخب ہونے کے امکانات روشن ہیں۔

ٹرمپ کو برتری، امریکی شہریوں کا کینیڈا منتقل ہونے پر غور *

اس موقع پر جہاں دنیا بھر میں امریکی انتخاب مرکز نگاہ ہیں وہیں پاکستانی بھی انتخاب کے نتائج کے شدت سے منتظر ہیں اور ساتھ ساتھ ٹوئٹر پر اس صورتحال پر طنزیہ، مزاحیہ اور سنجیدہ تبصروں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے بھی اپنی سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ، ’تو پھر دھرنا کب شروع ہونے جارہا ہے؟ مجھے بھی وہاں جانا چاہیئے‘۔

اس سے قبل ایک اور ٹوئٹ کرتے ہوئے انہوں نے کہا، ’زندہ ہے سیکس ازم (صنفی تفریق) زندہ ہے۔ اسلام ہمیں بتاتا ہے کہ ہم وہی حاصل کرتے ہیں جس کے مستحق ہوتے ہیں‘۔

یہاں صنفی تفریق کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے اس امر کی طرف اشارہ کیا کہ شاید امریکیوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کے مقابلے میں ایک عورت کو ووٹ دینا پسند نہیں کیا۔

ہمارے لیے ڈیمو کریٹس نہیں ری پبلکن موزوں ہے، مشرف *

واضح رہے کہ امریکی صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ پہلے ہی کہہ چکے تھے کہ اگر انتخابات کا نتیجہ ان کے خلاف آیا تو وہ ان نتائج کو تسلیم نہیں کریں گے جس کے بعد دنیا بھر میں مقیم پاکستانیوں نے اس صورتحال کو پاکستانی انتخابات سے تشبیہ دینی شروع کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں