The news is by your side.

گستاخانہ بیان دینے والا بی جے پی رکن اسمبلی پھر گرفتار

نئی دہلی: گستاخانہ بیان دینے والا شاتم رسولﷺ بی جے پی رکن اسمبلی ٹی راجا سنگھ کو پھر گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی حکمراں جماعت بی جے پی کے رکنِ اسمبلی ٹی راجا سنگھ کو پولیس نے پھر گرفتار کر لیا، راجا سنگھ منگل کو گرفتار ہونے کے کچھ دیر بعد ہی ضمانت پر رہا ہو گیا تھا۔

توہین رسالت کے مرتکب، گستاخانہ بیان دینے پر ٹی راجا سنگھ کے خلاف تلنگانہ اور حیدرآباد سمیت دیگر شہروں میں مسلمانوں کا احتجاج جاری ہے۔

مسلمانوں کے احتجاج پر راجا سنگھ کے کچھ روز قبل کو منگل کے روز پولیس نے گرفتار کر لیا تھا لیکن تھوڑی دیر بعد ہی مقامی عدالت نے ضمانت منظور کرتے ہوئے رہا کر دیا تھا۔

ٹی راجا سنگھ کے خلاف حیدر آباد کے دبیر پورہ پولیس تھانے میں تعزیرات ہند کی دفعہ 295 اے اور 153 اے سمیت کئی دفعات میں کیس درج کیا گیا ہے۔

بی جے پی رکن ٹی راجا سنگھ کی گستاخانہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی، بی جے پی نے بھی راجا سنگھ کی رکنیت معطل کردی ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق گستاخانہ بیان کے بعد سے حیدرآباد میں کشیدگی برقرار ہے اور شہر میں پولیس کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کی جانب سے بھی راجا سنگھ کے بیان کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔ دفتر خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ تین ماہ میں دوسری مرتبہ ایک سینیئر بی جے پی رہنما نے پیغمبر اسلام سے متعلق توہین آمیز بیان دیا ہے، جس سے دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

دفتر خارجہ نے بھارت سے مطالبہ کیا ہے کہ ان رہنماؤں کے خلاف کارروائی کی جائے جو بار بار اسلام پر حملہ کرتے ہیں اور پیغمبر اسلام کے خلاف توہین آمیز بیان دیتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں