The news is by your side.

Advertisement

ضد اور انا “دیوا” کو لے ڈوبی

بولی وڈ میں پروڈیوسر اور اداکاروں کے درمیان معاوضے یا اسکرپٹ میں ردوبدل اور جھگڑے فلموں کو شوٹنگ شروع ہونے کے بعد یا اس سے پہلے ہی “انجام” سے دوچار کردینے کا باعث بنتے رہے ہیں۔

یہاں ہم امیتابھ بچن کی اس فلم کا ذکر کررہے ہیں جس کی شوٹنگ چند ہفتے جاری رہنے کے بعد روک دی گئی تھی۔

فلم ”دیوا“ کا اسکرپٹ سبھاش گھئی نے خصوصی طور پر لکھوایا تھا۔ ان کی خواہش تھی کہ وہ سپر اسٹار امیتابھ بچن کے ساتھ کام کریں۔ جب اس اسٹوری کے لیے امیتابھ بچن سے بات کی تو انھیں فلم کا اسکرپٹ اور اس میں اپنا کردار پسند آیا اور معاملات طے کرکے شوٹنگ کا آغاز کر دیا گیا۔

1987 میں اخبارات میں اس فلم کا بڑا چرچا ہوا، مگر اچانک یہ خبر سامنے آئی کہ فلم کی شوٹنگ روک دی گئی ہے۔

بولی وڈ سے “اندر” کی خبر لانے والوں کا کہنا تھاکہ انڈسٹری کے دونوں بڑے ناموں کے درمیان کچھ معاملات پر بات بگڑی اور انھوں نے اسے اپنی انا کا مسئلہ بنا لیا۔

سبھاش گھئی سمجھتے تھے کہ وہ فلم کے ڈائریکٹر اور پروڈیوسر ہیں اس لیے ان کی ہر بات مانی جائے جب کہ بگ باس کا کہنا تھاکہ وہ اپنی مرضی کے مطابق کام کریں گے اور جہاں ضرورت محسوس ہو گی سین میں ردوبدل کروائیں گے۔
یوں یہ فلم ضد اور انا کی نذر ہو گئی اور چند ہفتوں بعد اس کی شوٹنگ روک دی گئی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں