بولنے میں مشکلات کا شکار بچوں کے لیے جدید تھراپی -
The news is by your side.

Advertisement

بولنے میں مشکلات کا شکار بچوں کے لیے جدید تھراپی

پاکستان میں بولنے کے دوران مشکلات کا شکار بچوں کی مدد کے لیے بولو ٹیک نامی اسپیچ تھراپی پلیٹ فارم تیار کرلیا گیا۔ یہ پلیٹ فارم دو نوجوان طالبات نے تیار کیا ہے۔

کراچی کی ایک نجی جامعہ میں زیر تعلیم دو طالبات شانزہ خان اور رباب کا تعلیمی مقاصد کے لیے بنایا جانے والے یہ پلیٹ فارم ان بچوں اور بڑوں کے لیے امید کی کرن ہے جو بولنے میں مشکل کا شکار ہوتے ہیں۔

لفظوں کو ان کے صحیح مخرج یا تلفظ سے ادا نہ کر پانا ایک بیماری ہے جسے ڈیسرتھریا کہا جاتا ہے۔ یہ بیماری اس وقت سامنے آتی ہے جب گفتگو میں مدد دینے والے خلیات تباہ ہوجائیں۔

مزید پڑھیں: لوگ ہکلاتے کیوں ہیں؟

خلیات کی خرابی کا یہ عمل دماغ یا اعصاب کو نقصان پہنچنے کی صورت میں سامنے آتا ہے۔ بعض اوقات یہ مرض پیدائشی ہوتا ہے اگر پیدائش کے وقت کسی پیچیدگی کے باعث بچے کے دماغ کو کوئی نقصان پہنچ جائے۔

اسی طرح کسی خطرناک حادثے، فالج، شدید دل کے دورے، سر یا گردن کو لگنے والی خطرناک چوٹ کی صورت میں بھی دماغ کو نقصان پہنچتا ہے جس سے بولنے کی صلاحیت متاثر ہوجاتی ہے۔

بولو ٹیک نامی یہ پلیٹ فارم جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے بچوں اور بڑوں کو اسپیچ تھراپی میں مدد دیتا ہے اور وہ بہتر طور پر جان سکتے ہیں کہ کس لفظ کو کس طرح ادا کیا جانا چاہیئے۔

اسے تیار کرنے والی طالبات کا کہنا ہے کہ یہ پلیٹ فارم بچوں کو اردو زبان بہتر کرنے میں مدد دے گا۔

اس پلیٹ فارم کے ذریعے گو کہ مریض افراد کو صحت یابی کے لیے کئی ماہ یا کئی سال درکار ہوں گے، لیکن اس کے نتائج عام انداز سے کی جانے والی تھراپی سے بہتر ہوں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں