افغانستان، انتخابی ریلی میں دھماکا، 12 افراد ہلاک، 32 زخمی afghanistan blast
The news is by your side.

Advertisement

افغانستان، انتخابی ریلی میں دھماکا، 12 افراد ہلاک، 32 زخمی

کابل: افغانستان کے صوبے تخار میں انتخابی ریلی میں دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور 32 زخمی ہوگئے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے صوبے تخار کے ضلع رستاق میں انتخابی ریلی کے دوران موٹرسائیکل میں نصب بم زوردار دھماکے سے پھٹ گیا جس کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور 32 زخمی ہوگئے۔

ریسیکیو اداروں نے دھماکے میں ہلاک و زخمی ہونے والوں کو اسپتال منتقل کیا، جہاں متعدد افراد کی حالت تشویش ناک بتائی جارہی ہے، ہلاک ہونے والوں میں 2 سیکیورٹی اہلکار بھی شامل ہیں۔

گورنر تخار احمد جواد ہجری نے کہا ہے کہ دھماکے کے نتیجے میں ہلاکتوں میں اضافہ ہوسکتا ہے کیونکہ متعدد زخمیوں کی حالت انتہائی نازک ہے جبکہ پولیس چیف نے دھماکے میں 32 افراد کے زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے۔

پولیس چیف خلیل اسر نے کہا کہ 20 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات کے سلسلے میں خاتون امیدوار نازیفہ یوسفی ریلی نکال رہی تھیں کہ اسی دوران قریب کھڑی موٹر سائیکل میں نصب بم دھماکے سے پھٹ گیا۔

واضح رہے کہ افغانستان میں 20 اکتوبر کو پارلیمانی انتخابات ہونے جارہے ہیں جس میں دو ہزار سے زائد امیدوار حصہ لے رہے ہیں اسی سلسلے میں امیدواروں کی جانب سے ریلی نکالنے کا سلسلہ جاری ہے۔

مزید پڑھیں: افغانستان میں انتخابی ریلی کے دوران خودکش دھماکا، 13 افراد ہلاک

یاد رہے کہ رواں ماہ کے شروع میں افغانستان کے صوبے ننگر ہار کے ضلع کامہ میں امیدوار عبدالناصر محمد کی انتخابی ریلی میں خودکش دھماکا ہوا تھا جس کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک اور 40 زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں