The news is by your side.

Advertisement

عالمی سطح پرپاکستان بلین ٹری سونامی منصوبے کی پذیرائی

عالمی بون چیلنج میں پاکستان کی جانب سے 10ارب درختوں کی سونامی مہم کے ذریعے جنگلات کی بحالی کی کوششوں کو سراہا گیا ہے، پاکستان پہلا ملک ہے جس نے وسیع و عریض رقبے پر جنگلات کی بحالی کا عزم کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق عالمی بون چیلنج کے تحت پاکستان بلین ٹری سونامی منصوبے کے ساتھ پہلا ملک ہے جس نے 34 کروڑ80 لاکھ ایکڑرقبے پرجنگلات کی بحالی کاعزم ظاہرکیاہے۔

سرکاری ریڈیو کے مطابق پاکستان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی صدر کی جانب سے منعقد کئے گئے اعلی سطح کے اجلاس میں بلین ٹری سونامی کے اپنے منصوبے کو ماحولیاتی تبدیلی کا مقابلہ کرنے کیلئے بڑی کوششوں کے طورپرپیش کیا ہے۔

اب یہ منصوبہ ملک بھرمیں 10ارب درختوں کی سونامی مہم میں تبدیل ہو چکا ہے۔فطرت کے تحفظ کے لئے بین الاقوامی یونین نے عالمی بون چیلنج میں پاکستان کی کامیابیوں اور 10ارب درختوں کی سونامی مہم کے ذریعے جنگلات کی بحالی کیلئے کوششوں کو سراہا ہے۔

یاد رہے کہ گلوبل وارمنگ کے باعث پاکستان سب سے زیادہ متاثر ہوگا، 5 سال میں پورے پاکستان کو سرسبز و شاداب کرنا ہے، جو بھی خالی علاقے اور زمین ملے گی وہاں پر پودے لگائیں گے۔

وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے حکومت سنبھالتے ہی کہا تھا کہ شجر کاری مہم کا مقصد موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنا ہے، شجر کاری مہم تمام شہروں میں شروع کررہے ہیں، پورے پاکستان میں 10 ارب درخت لگانے کا ہدف ہے۔

انہوں یہ بھی کہا تھا کہ اگردرخت لگانے نہ شروع کئے تو پاکستان ریگستان بن سکتا ہے، درخت نہ لگائے تو آلودگی کے مسئلے میں بھی اضافہ ہوگا، شجرکاری مہم کا مقصد آئندہ نسلوں کو بہتر ماحول فراہم کرنا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں