The news is by your side.

Advertisement

کووڈ 19 کے مریضوں کے لیے فائدہ مند سانس کی مشق

کووڈ 19 کا شکار ہوجانے کے بعد پھیپھڑوں پر سخت منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں جنہیں سانس کی مشقوں سے بہتر کیا جاسکتا ہے۔ سانس کو درست طریقے سے لینا بہت سے جسمانی مسائل سے چھٹکارا دلا سکتا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مارننگ شو باخبر سویرا میں گہری سانس لینے کی ورزش بتائی گئی۔

ماہر صحت کے مطابق کووڈ 19 کا شکار افراد پھیپھڑوں کے مسائل میں مبتلا ہوجاتے ہیں، اس کے لیے گہری سانس کی مشق ان کی صحت بہتر بنا سکتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کووڈ 19 کے مریضوں کو دن میں کچھ وقت کے لیے پیٹ کے بل لٹایا جائے کیونکہ ہمارے پھیپھڑوں کا زیادہ تر حصہ کمر کی طرف ہوتا ہے اور کمر کے بل لیٹنے سے پھیپھڑوں پر زور پڑتا ہے اور سانس کی تکلیف مزید بدتر ہوسکتی ہے۔

کووڈ 19 کے شکار ہر عمر کے مریض کچھ وقت کمر کے بل لیٹیں تاہم اگر کوئی دل کا مریض ہے تو وہ اس سے پرہیز کرے۔

سانس کی یہ مشق دمہ، سانس اور پھیپھڑوں کے دیگر امراض میں مبتلا افراد کے لیے بھی فائدہ مند ہے کیونکہ اس میں پھیپھڑے اپنی تمام استعداد سے کام کرتے ہیں۔ علاوہ ازیں کراچی کے شہری جو عام حالات میں بھی فضائی آلودگی سے پریشان رہتے ہیں ان کے لیے بھی یہ ورزش فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہے۔

سب سے پہلے فرش پر آلتی پالتی مار کر، یا کرسی پر آرام دہ حالت میں بیٹھ جائیں، کمر سیدھی رکھیں، اس کے بعد آہستگی سے سانس اندر کی طرف کھینچیں، جتنی دیر اسے اندر روک سکتے ہیں روکے رکھیں، اس کے بعد آہستگی سے منہ کے ذریعے باہر خارج کریں۔

گہری سانس کی اس مشق سے زیادہ مقدار میں آکسیجن اندر جاتی ہے، جس سے ڈپریشن میں کمی سمیت ذہنی صحت میں بہتری آتی ہے، دوران خون تیز ہوتا ہے جس سے جسم کے تمام اعضا بہتر طور پر کام کرنے لگتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں