The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس ، برطانیہ میں روزانہ10ہزار افراد کی ٹیسٹنگ کا عمل شروع

مانچسٹر : برطانیہ میں روزانہ10ہزارافراد کی ٹیسٹنگ کاعمل شروع ہوگیا،ٹیسٹنگ کے دوران طبی عملےکوترجیح دی جارہی ہے ، چیف میڈیکل آفیسر کا کہنا ہےکہ حالات سدھر نے میں 6ماہ کا عرصہ لگ سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں روزانہ10ہزارافراد کی کورونا ٹیسٹنگ کاعمل شروع کردیا گیا ہے ، اس دوران طبی عملےکوترجیح دی جارہی ہے۔

وزیر ہاؤسنگ رابرٹ جینرک کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن مزید سخت کر سکتے ہیں جبکہ وزیرِداخلہ پریٹی پاٹیل نے کہا ہے کہ آئسولیشن کے دوران گھریلو تشدد کو برداشت نہیں کریں۔

خیال رہے برطانیہ میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 209 افراد کرونا سے ہلاک ہوئے ، جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 1228 اوروائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 19,522 ہو گئی جبکہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 2433 نئے کیسز سامنے آئے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں لاک ڈاؤن کی مدت جون تک بڑھ سکتی ہے، یہ کہنا مشکل ہے کہ وائرس کا اثر کتنے عرصے تک ہے، لاک ڈاؤن کی مدت کا انحصار عوام کے تعاون اور رویے سے جڑا ہے۔

طبعی ماہر پروفیسر نیل فرگوسن نے مزید کہا کہ برطانیہ میں بہت جلد مکمل لاک ڈاؤن کرنے پر غور کیا جا رہا ہے ، وائرس کےپھیلاؤ کو روکنے کے لیے لوگوں کو ایک دوسرے سے دور رکھنا ضروری ہے۔

واضح رہے دنیا کے 199 ممالک کورونا وائرس کی لپیٹ میں ہیں،  دنیا بھر میں متاثرین کی تعداد 7 لاکھ 22 ہزار ہوگئی جبکہ  وائرس سے 33ہزار993 اموات ہوچکی ہے۔

اٹلی میں اموات کاسلسلہ جاری ہے  ،10 ہزار 779لقمہ اجل بن گئے جبکہ اسپین میں اموات6ہزار803 ہوگئیں اور 80 ہزارسےزیادہ متاثر ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں