The news is by your side.

چند مقبول کتابیں جو کاروباری افراد کی راہ نمائی کرتی ہیں!

امریکا کے صدر روز ویلٹ کے بارے میں‌ کہا جاتا ہے کہ وہ ایک ہی دن میں کئی کتابیں پڑھ لیتے تھے۔ اپنی آپ بیتی میں انھوں نے اپنے ذوقِ کتب بینی اور صبح سے شام گئے تک کئی کتابیں ختم کرنے کی خصوصیت کا بھی ذکر کیا ہے۔

آج وقت کی کمی اور ارتکازِ توجہ ایک عام مسئلہ ہے اور ایسا کرنا ہماری نظر میں ناممکن ہو اور یہ بھی ہوسکتا ہے بعض لوگوں نے اس عادت کے حوالے سے مبالغہ آرائی سے کام لیا ہو، لیکن یہ سچ ہے کہ دنیا کی مشہور اور اپنے شعبے میں کام یاب تصوّر کی جانے والی کئی شخصیات کو کتب بینی کا شوق اور مطالعہ کرنے کی عادت رہی ہے۔ دنیا کے کام یاب ترین لوگ باقاعدگی سے کتابیں پڑھتے ہیں۔ یہاں ہم اُن کتابوں کا تذکرہ کررہے ہیں جنھیں پڑھ کر آپ یہ جان سکتے ہیں کہ کاروبار کو بتدریج وسعت دیتے ہوئے منافع بخش بنانے اور ہر سطح پر نمایاں ہونے کے لیے کیا کرنا چاہیے۔ یہ کتابیں بتاتی ہیں‌ کہ کیسے کسی کمپنی کا نام اور ساکھ بنائی جاسکتی ہے، مسابقت کی دوڑ کس طرح جیتی جائے اور کاروباری دنیا میں‌ مسائل کا مقابلہ کرتے ہوئے جدید رجحانات سے کیسے استفادہ کیا جاسکتا ہے۔

Lies, Damned Lies, and Marketing
یہ کتاب ان لوگوں کے لیے ہے جو کاروبار کررہے ہیں اور اپنے برانڈ یا مصنوعات کی مؤثر تشہیر اور وسیع پیمانے پر فروخت چاہتے ہیں۔ ہم جانتے ہیں کہ کاروبار کی کام یابی میں مارکیٹنگ کا عمل دخل کلیدی حیثیت کا حامل ہے، لیکن اتل منوچا سمجھتے ہیں‌ کہ مارکیٹنگ کے ساتھ کچھ دوسری چیزیں بھی آپ کے کاروبار کو وسعت اور نفع بخش بناتی ہیں۔ انھوں نے اپنی اس کتاب میں‌ انہی باتوں پر روشنی ڈالی ہے۔

مصنّف کئی ملٹی نیشنل کمپنیوں میں مختلف عہدوں پر کام کرچکے ہیں اور اپنی کتاب میں انھوں‌ نے بھرپور تشہیر کے باوجود توقع کے مطابق نتائج کے حصول میں‌ ناکامی پر بات کی ہے۔

The Exit-Strategy Playbook
اس کتاب کے مصنّف ایڈم کوفی ہیں‌۔ انھوں‌ نے کسی بھی کمپنی کو منافع بخش بنانے اور خاص سطح پر لا کر اسے فروخت کرنے کے بنیادی قوانین پیش کیے ہیں۔
دنیا میں‌ بہت سے کاروباری افراد ایسے بھی ہیں‌ جو چند سال بعد ایک منافع بخش کمپنی کو چھوڑ کر نئے کاروبار کی بنیاد رکھنا چاہتے ہیں۔ بعض‌ اوقات وہ ایسا کسی ذاتی مسئلے، کاروباری الجھنوں کی وجہ سے کرتے ہیں اور کبھی انھیں‌ اپنی آزمائش مقصود ہوتی ہے۔ یہ لوگ چیلنجز کا سامنا کرنے کے عادی ہوتے ہیں اور تبدیلی کی خواہش رکھتے ہیں۔ ایسی صورت میں وہ اپنے منافع بخش کاروبار کو کسی بھی دل چسپی رکھنے والے کے ہاتھوں فروخت کردیتے ہیں۔ مصنّف نے اس کتاب میں‌ بتایا ہے کہ ایسے بزنس مین کن اصولوں اور طریقوں پر عمل کرکے اپنی کمپنی کو کسی بھی سرمایہ کار کے لیے زیادہ پُرکشش بنا کر اسے خریدنے پر آمادہ کرسکتے ہیں۔
ایڈم مرفی کی یہ کتاب بتاتی ہے کہ کوئی بھی کاروباری ادارہ کس طرح‌ ایسا شان دار فریم ورک ترتیب دے سکتا ہے کہ اسے کوئی بھی خریدنے کو تیّار ہو۔

Brands Don’t Win
اسٹین برنارڈ کی یہ کتاب بتاتی ہے کہ وہی کمپنیاں اپنے اپنے شعبے میں‌ نمایاں ہوتی ہیں جو کسی طرح دوسروں سے مختلف انداز اپناتی ہیں، اور غیر روایتی طرز پر کام کرتے ہوئے اپنا مقام بناتی ہیں۔ وہ کہتے ہیں کہ اگر اسٹار بکس اور پیلوٹون نے بھی اپنے اپنے شعبہ کے متعین کردہ اصولوں اور مخصوص طریقۂ کار کے تحت کاروبار کیا ہوتا تو وہ کبھی نمایاں نہ ہوتیں۔

Detox
اس کتاب کی مصنّف میلنی پمپ ہیں جو ان تمام عناصر، اجزاء، رویّوں اور ثقافتی رجحانات کی نشان دہی کرتی ہیں جو کسی بھی کمپنی کو کام یابی سے دور کرسکتی ہیں۔ وہ ان عناصر اور مختلف عوامل کو ترقی کی راہ میں‌ رکاوٹ اور انفرادیت کے عمل میں زہر جیسا قرار دیتی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں