The news is by your side.

Advertisement

سول ایوی ایشن اتھارٹی کی اراضی پر قبضے میں‌ اپنے ہی افسران ملوث نکلے

کراچی: سول ایوی ایشن اتھارٹی کے تین افسران  کی بیش قیمت اراضی پر قبضہ کرنے والے میں ملوث نکلے، جن کے خلاف مقدمہ درج کردیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی9 ایکڑ  بیش قیمت اراضی پر قبضہ کیس میں ایف آئی اے کا رپوریٹ کرائم سرکل  نے دو مقدمات درج کر کے چار ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

گرفتار کیے جانے والے ملزمان کی تعداد چار ہے، جن میں تین سول ایوی ایشن کے افسران ہیں۔

ایف آئی اے ذرائع کے مطابق گرفتار افسران کی شناخت زریں گل درانی، محمد یونس، سید محمد کلیم جبکہ ایک مشتاق نام سے ہوئی۔

فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کارپوریٹ سیل نے مقدموں میں مجموعی طور پر 32 ملزمان کو نامزد کیا، جن میں لینڈ یوٹیلائزیشن ڈیپارٹمنٹ کے سیکریٹری ثاقب سومرو ، اسسٹنٹ کمشنر، ڈپٹی کمشنر سید محمد علی شاہ، قاضی جان محمد، مختیار کار، تپیدار، سپروائزر،  رجسٹرار، سی اے اے اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے  افسران و دیگرپرائیوٹ افراد بھی شامل ہیں۔

مزید پڑھیں: کراچی، سول ایوی ایشن کی قبضہ کی گئی زمین واگزار

ایف آئی اے کی چھاپہ مارٹیم نے اس وقت کے اسسٹنٹ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر محمد علی شاہ کو گرفتار کرنے کے لیے گھر پر چھاپہ بھی مارا مگر وہ ہاتھ نہ آسکے۔

نامزد ملزمان کی گرفتاری کے لئےایف آئی اے کے مختلف سرکل کے اہلکاروں پر ایک ٹیم تشکیل دی ہے، جسے جلد از جلد نامزد ملزمان کو گرفتار کرنے کا ٹاسک سونپا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں