The news is by your side.

Advertisement

گوبھی میں‌ صحت کے لیے چھپے راز جان کر آپ حیران رہ جائیں‌ گے

گوبھی ایک ایسی سبزی ہے جسے اکثر نظر انداز کر دیا جاتا ہے، لیکن قدرت کا یہ عظیم تحفہ معجزاتی خواص سے بھرپور ہے۔

گوبھی میں موجود فائٹو کیمیکلز، اینٹی آکسیڈنٹس، وٹامنز، کیروٹونوئیڈز، فائبر اور دیگر فینولک مرکبات دماغی امراض، کینسر، امراضِ قلب اور موٹاپے کو روکنے میں مددگار ہوتے ہیں، غرض آپ جان کر حیران رہ جائیں گے کہ ایک پیالہ گوبھی میں کیا کیا اہم خزانے چھپے ہیں۔

اس میں 29 کیلوریز، شکر اور چکنائی صفر کے برابر، وٹامن سی کی روزانہ کی بنیاد پر 73 فی صد مقدار، فولیٹ، پینٹوتھونک ایسڈ، وٹام بی 6، کولائن، فائبر، اومیگا تھری فیٹی ایسڈز اور وٹامنز موجود ہیں۔

وٹامن اور معدنیات کا خزانہ ـ گوبھی میں وٹامن سی بھرا ہوتا ہے، گوبھی چکنائیوں کو گھلانے میں بھی بہت مددگار ہے، اس میں موجود وٹامن کے ہڈیوں کو کمزور نہیں ہونے دیتا اور جسم میں جلن اور سوزش کو کم کرتا ہے۔

بینائی ـ گوبھی کا استعمال انسان کی بینائی کو تیز کرتا اور دماغ کو راحت پہنچاتا ہے۔

ہارمونز ـ کے توازن کو برقرار رکھنے میں گوبھی مدد دیتی ہے۔

کمزور معدہ ـ جن لوگوں کا معدہ کمزور ہے وہ گوبھی کا سوپ لازمی پئیں کیوں کہ اس کے استعمال سے معدے میں زہریلے مادوں کو جمع ہونے سے روکا جا سکتا ہے۔

وزن ـ گوبھی کا استعمال وزن کو تیزی سے کم کرنے میں بہت مفید ہے۔

ہڈیوں کی مضبوطی ـ گوبھی ہڈیوں کے لیے بھی نہایت مفید ہے، یہ ہر طرح کے درد کو ختم اور ہڈیوں کو مضبوط بناتی ہے۔

کینسر ـ دنیا میں کئی سروے اور مطالعات ہو چکے ہیں جن سے ظاہر ہوا کہ گوبھی سینے، جگر، آنت، پیٹ اور دیگر اقسام کے سرطان کو روکنے میں معاون ہے، گوبھی کینسر کی رسولیوں پر اثر انداز ہوکر ان کی نشوونما کو روکتی ہے اور کینسر کی وجہ بننے والے خطرناک کیمیکلز کے مضر اثرات کو کم کرتی ہے۔

امراض قلب ـ گوبھی فالج، دل کے دورے، دماغی امراض اور ذیابیطس کے خلاف بھی مؤثر ہے، اس میں موجود وٹامن اور اومیگا تھری فیٹی ایسڈز دل کی شریانوں اور خون کی رگوں کو ہر قسم کی کثافت سے دور رکھتے ہیں اور کولیسٹرول کو بھی بڑھنے نہیں دیتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں