The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کی سرپرستی میں’احساس پروگرام‘ کی نئی پالیسی تشکیل

اسلام آباد : وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ کابینہ نے’احساس پروگرام‘ کی گورننس،انٹیگریٹی پالیسی کی منظوری دے دی، نئی پالیسی وزیراعظم کی سرپرستی میں بنائی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے ’احساس پروگرام‘ میں کڑے احتساب کی پالیسی متعارف کرا دی گئی، پالیسی میں ادائیگیوں، ٹھیکوں، بھرتیوں، خریداری میں شفافیت سمیت 27 نکات شامل ہیں۔

معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ گورننس وانٹیگریٹی پہلی پالیسی ہے۔ انہوں نے منظوری پر کابینہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ نئی پالیسی وزیراعظم کی سرپرستی میں بنائی گئی ہے، وزیراعظم چاہتے ہیں پروگرام کے تحت حقداروں تک ان کی رقم پہنچے۔

انہوں نے کہا کہ لنگر، وظائف، بلاسود قرض اور اثاثوں کی منتقلی پروگرام پر لاگو ہوگی، نئی پالیسی کمیشن پرٹھیکوں، بھرتیوں میں اقربا پروری ختم کرائے گی، پالیسی دبی آڈٹ رپورٹس سامنے لائے گی، کرپشن کا خاتمہ ہوگا۔

معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ ادارے صوابدیدی اختیارات ختم ہونے کے ڈر سے پالیسیاں نہیں بنا پاتے، ربڑاسٹمپ کمیٹیوں، بورڈز کو فعال بنائیں گے۔

حکومت کا احساس پروگرام اُن لوگوں کے لیے ہے، جن کے پاس نوکریاں نہیں ، ڈاکٹر ثانیہ نشتر

یاد رہے کہ رواں سال جولائی میں وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشترکا کہنا تھا کہ احساس پروگرام اُن لوگوں کے لیے ہے، جن کے پاس نوکریاں نہیں، پروگرام کے تحت 4 سال ہر ماہ 80 ہزار روپے بلاسود قرضہ دیا جائے گا۔

معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشترکا مزید کہنا تھا کہ شفافیت اورگورننس بہت ضروری ہے، اسکالرشپ بھی آئے گی، گورننس میں شفافیت اہم چیزہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں