The news is by your side.

Advertisement

عمان میں تارکین وطن اپنی جائیداد خرید سکتے ہیں یا نہیں؟ فیصلہ ہوگیا

مسقط : عمان نے تارکین وطن کو سلطنت میں نصف ملین عمانی ریال تک کی جائیداد رکھنے کی اجازت دے دی ہے، تارکین وطن تین کٹیکگریز میں خرید و فروخت کرسکتے ہیں۔

عمان کے ہاؤسنگ اور شہری منصوبہ بندی کے وزیر ڈاکٹر خلفان بن سعید الشویلی نے ایک وزارتی فیصلہ جاری کیا جس کے تحت غیر ملکی سرمایہ کاروں کو جائیدادیں خریدنے کی اجازت دی گئی ہے۔

غیر ملکی جو 500,000 سے250,000 عمانی ریال کے درمیان مکانات خریدیں گے انہیں فرسٹ کلاس ملے گا رہائش گاہ کارڈ، جبکہ عمانی ریال 250,000 سے کم قیمت والے گھر رکھنے والے دوسرے درجے کا رہائشی کارڈ حاصل کر سکیں گے۔

ایسے سرمایہ کار جن کے پاس ہاؤسنگ یونٹ ہیں جو انہیں فرسٹ کلاس رہائشی کارڈ حاصل کرنے کے قابل بناتے ہیں وہ بھی ان علاقوں سے باہر رہائشی، تجارتی یا صنعتی استعمال کے لیے ایک جائیداد کے مالک ہو سکتے ہیں جو غیرملکی ملکیت کے لیے درج ہیں۔

اومان میں غیر ملکیوں کو جائیداد خریدنے کی اجازت دی گئی | KHALEEJ URDU | UAE  NEWS URDU | DUBAI NEWS URDU | GULF NEWS URDU | DAILY UAE NEWS | DAILY

غیر ملکیوں کے ذریعہ جائیداد کی ملکیت شاہی فرمان کے تحت جاری کردہ انتظامی ضوابط کی خلاف ورزی کیے بغیر کی جانی چاہیے، جس میں ان علاقوں کی فہرست دی گئی ہے جہاں سلطنت میں غیر عمانیوں کو رئیل اسٹیٹ رکھنے سے منع کیا گیا ہے۔

جن علاقوں میں تارکین وطن جائیدادیں نہیں خرید سکتے ان میں مسندم، بریمی، ظہیرہ، الوسطہ اور غفر (سوائے صلالہ کی ولایت کے) گورنریٹس اور لیوا، شناس، مسیرہ، جبل اخدر اور جبل شمس کی ولایتیں اور کوئی اور پہاڑی علاقے شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں