The news is by your side.

Advertisement

عالمی ثالثی عدالت نے کرکٹر عمر اکمل کیس کا فیصلہ سنادیا

لاہور: عالمی ثالثی عدالت نے کرکٹر عمر اکمل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے قومی ٹیم کے مڈل آرڈر بلے باز کو 12 ماہ کی پابندی اور بیالیس لاکھ پچاس ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق عالمی ثالثی عدالت نے انڈیپنڈنٹ ایڈجوڈیکٹر کے فیصلے کے خلاف پاکستان کرکٹ بورڈ اور عمر اکمل کی جانب سے دائر کردہ اپیلوں پر فیصلہ سنادیا ہے۔

فیصلے میں پی سی بی کوڈ آف کنڈکٹ کی شق 2.4.4کی ایک مرتبہ خلاف ورزی کرنے پر عمر اکمل پر 12 ماہ کی پابندی اور 42 لاکھ 50ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا گیا ہے۔

تاہم عالمی ثالثی عدالت نے عمر اکمل کی سزا ڈیڑھ سال سے کم کرکے ایک سال کردی ہے، عمر اکمل کو پی سی بی اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی پر تین سال کی سزا سنائی گئی تھی۔

پی سی بی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق بیس فروری دوہزار بیس کو معطلی کا شکار ہونے والے عمر اکمل اب 42 لاکھ 50 ہزار روپے جرمانے کی رقم جمع کرانے کے ساتھ پی سی بی کے سیکیورٹی اور اینٹی کرپشن ڈپارٹمنٹ کے طے شدہ ری ہیب پروگرام پر عمل کرکے دوبارہ مسابقتی کرکٹ کھیلنے کے اہل ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  پی سی بی نے عمر اکمل کی سزا میں کمی کے خلاف اپیل دائر کر دی

واضح رہے کہ عمراکمل پربکیز سے ملنے اور فکسنگ کی آفر رپورٹ نہ کرنےکا الزام تھا، جس کے باعث عمراکمل پر بیس فروری دو ہزار بیس کو تین سال کی پابندی عائدکی گئی تھی، سزامیں کمی کیخلاف پی سی بی نے عالمی ثالثی عدالت سے رجوع کیاتھا۔

فیصلہ آنے کے کرکٹر عمراکمل کا کہنا تھا کہ ریلیف پر اللہ کا شکر گزار ہوں، فیلڈ میں آنا چاہتاہوں اور کرکٹ کھیلنا چاہتاہوں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں