The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں دریافت قدرتی غاروں کو سیاحتی مقامات میں شامل کرنے کی تیاری

ریاض: سعودی جیولوجیکل سروے نے ملک میں دریافت قدرتی غاروں کو سیاحتی مقامات میں شامل کرنے کی تیاری شروع کردی۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی جیولوجیکل سروے اتھارٹی کے سرکاری ترجمان طارق اباالخیل نے بتایا کہ اتھارٹی کئی غاروں کو سیاحوں کے لیے پرکشش بنانے کا ارادہ رکھتی ہے۔

جیولوجیکل سروے اتھارٹی کے ترجمان کے مطابق ان میں بعض غاروں کی عمر تین کروڑ برس سے بھی زیادہ ہے جبکہ جیولوجیکل سروے کے ماہرین نے تفصیلی مطالعاتی تحقیق کے بعد ان غاروں کا انکشاف کیا ہے۔

طارق اباالخیل نے کہا کہ 250 سے زیادہ غاروں کے انکشاف کے علاوہ ہزاروں غیر دریافت شدہ غاروں کے وجود کے ساتھ مملکت میں ماحولیاتی اور ارضیاتی سیاحت میں ترقی دیکھی جارہی ہے، ہمیں چاہئے کہ اس قدرتی دولت کی حفاظت کریں جو مملکت کو مالا مال بناتی ہے۔

مزید پڑھیں: سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی جبل اللوز آمد، تصاویر وائرل

دوسری جانب سعودی جیولوجیکل سروے اتھارٹی میں غاروں کے شعبے کے سربراہ محمود الشنطی نے ان قدرتی غاروں کو قومی دولت قرار دیا جس میں نادر نوعیت کی ماحولیاتی سیاحت کے لیے عناصر اکٹھا ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان میں بعض غاروں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے انہیں اکیڈمک اسٹڈیز اور سائنسی ریسرچ کے کام میں بھی لایا جاسکتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں