The news is by your side.

Advertisement

کورونا کی 6 نئی علامات سامنے آگئیں

واشنگٹن : امریکا کے سینٹرفار ڈیزیزز کنٹرول نے کورونا کی نئی علامات کی نشاندہی کردی، جس میں سردی لگنا،لرزہ طاری ہونا،پٹھوں میں تکلیف، سر درد ،گلے میں سوزش،ذائقہ اور بو سے محروم ہونا بھی شامل ہے۔

تفصیلات کے مطابق خطرناک عالمی وباء کرونا وائرس سے ہلاکتوں اور متاثرہ افراد میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے اور دنیا بھر میں سائنسد ان اس وائرس کے علاج اور علامات کے حوالے سے تحقیق کر رہے ہیں۔

محققین نے شروع میں کورونا وائرس کی چند عام علامات بتائی تھیں، جس میں خشک کھانسی، تیز بخار اور سانس لینے میں مسئلہ ہوسکتا ہے تاہم امریکا کے سینٹرفار ڈیزیزز کنٹرول نے کورونا کی علامات کی اپنی موجودہ فہرست میں متعدد نئی علامات شامل کیں۔

امریکی ماہرین کی جانب سے نئی علامات میں سردی لگنا،لرزہ طاری ہونا،پٹھوں میں تکلیف، سر درد ،گلے میں سوزش،ذائقہ اور بو سے محروم ہونا بھی شامل ہے۔

ان میں سے کچھ نئی درج ہونے والے علامات کے ثبوت موجود ہیں، این پی آر اور دیگر خبر رساں اداروں نے گذشتہ ماہ اطلاع دی تھی کہ کوویڈ 19 کے ساتھ کچھ لوگوں نے بو اور ذائقہ سے محروم ہونے کی اطلاع دی جبکہ مریضوں میں پٹھوں میں درد ، سردی لگنے اور سر درد کی شکایات بھی سامنے آئی ہیں۔

سی ڈی سی کا کہنا ہے کہ عام طور پر کورونا وائرس کی علامات دو سے 14 دن میں ظاہر ہوتی ہیں، اگر کسی کو سانس لینے میں دشواری ، سینے میں مستقل درد یا دباؤ ، نیلے ہونٹ ہو تو فوری طور پر طبی امداد لینا چاہئے۔

سی ڈی سی کے مطابق امریکا میں دنیا میں سب سے زیادہ کورونا کے تصدیق شدہ کیسز ہیں ، آنے والے دنوں میں یہ تعداد  10 لاکھ سے عبور کرنے کا امکان ہے جبکہ اس بیماری سے اموات کی تعداد نمونیہ اور فلو کی سالانہ اموات سے کہیں زیادہ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں