The news is by your side.

Advertisement

کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ کا سنا مکی کے پتوں سے علاج سے متعلق اہم بیان

لاہور : چئیرمین کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ پروفیسرمحمودشوکت کا کہنا ہے کہ کچھ افراد کو سنا مکی کے پتے الٹا زیادہ نقصان پہنچاتے ہیں، لوگوں سے گزارش ہے کہ ایسے ٹوٹکوں سے پرہیز کریں۔

تفصیلات کے مطابق چئیرمین کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ پروفیسرمحمودشوکت نے میڈیا بریفنگ میں کہا کہ رویوں نے بتانا ہے کہ کیسز کی دوسری پیک آئے گی یا نہیں، کچھ افراد کو سنا مکی الٹا زیادہ نقصان پہنچاتی ہے، لوگوں سے گزارش ہے کہ ایسے ٹوٹکوں سے پرہیز کریں۔

اینٹی بائیوٹک کے استعمال کے حوالے سے پروفیسرمحمودشوکت وائرس پر کوئی اینٹی بائیوٹک ایسے اثر نہیں کرتی، اگر ڈاکٹر تجویز کرے گا تو ہی آپ نے کھانی ہے۔

چئیرمین کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ نے مزید کہا کہ اسمارٹ لاک ڈاون یا لاک ڈاون کی بحث میں عوام نہیں پڑنا چاہیے۔

یاد رہے شعبہ حکمت سے وابستہ نامور حکیم آغا عبدالغفار نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں سنا مکی سے کرونا کے علاج کی باتوں کو بے بنیاد قرار دیا تھا۔

حکم عبدالغفار کا کہنا تھا کہ سنا مکی سے کرونا علاج ممکن ہونے کی بات بھیڑ چال جیسی ہے، میرے علم کے مطابق دو ہزار سال کی تاریخ میں کسی حکیم یا طبیب نے سینے کے انفیکشن کے لیے سنا مکی جڑی بوٹی کے استعمال کی تجویز نہیں دی ہوگی۔

انہوں نے بتایا تھا کہ سنا مکی سے کرونا کے علاج کی باتیں سوشل میڈیا پر پھیلائی جارہی ہیں جو بالکل بے بنیاد ہیں، ہاں اس پودے کے پتوں سے قبض، آنت کی سوزش، سینے کے بھاری پن ، سینہ جکڑنا جیسے امراض کا علاج ممکن ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں