The news is by your side.

Advertisement

پارلیمانی کمیٹی کی حکومتی ٹیم میں تبدیلی

اسلام آباد : پارلیمانی کمیٹی میں شامل حکومتی ٹیم کے رکن خواجہ آصف کی جگہ وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کو شامل کر لیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پارلیمانی کمیٹی کی حکومتی ٹیم میں تبدیلی کی گئی ہے،حکومتی ٹیم میں سے خواجہ آصف کی جگہ وفاقی وزیرِ قانون زاہد حامد کو شامل کر لیا گیا ہے، جو ٹیم کی قانونی مشاورت کے لیے ہر وقت دستیاب ہونگے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی کی اپوزیشن ٹیم میں سینیٹر اور ممتاز قانون دان بیرسٹر چوہدری اعتزاز احسن کی موجودگی سے اپوزیشنٹیم کی قانونی پہلوؤں پر مضبوط گرفت تھی،جب کہ حکومتی ٹیم کو قانونی مشاورت کے لیے وزیر قانوں سے بار بار رابطہ کرنا پڑ رہا تھا۔


پاناماپیپرز پرپارلیمانی کمیٹی کےقیام سےمتعلق تحریک میں ترمیم منظور


حکومتی اراکین نے اس پریشانی سے بچنے کے لیے تجویز پیش کی تھی کہ حکومتی ٹیم میں کوئی قانون دان مشاورت کے لیے موجود ہو،اس لیے آج پارلیمانی کمیٹی کی حکومتی ٹیم میں وفاقی وزیرِ دفاع خواجہ آصف کی جگہ وفاقی وزیرِ قانون زاہد حامد کو شامل کر لیا گیا۔


پانامالیکس : پارلیمانی کمیٹی کیلئے6 حکومتی ناموں کی منظوری


یاد رہے آئین میں پارلیمانی کمیٹی میں اراکین کی تعداد 12 رکھنے کی ترمیم کی گئی تھی، کمیٹی میں 6 حکومتی اور 6 اپوزیشن ٹیم کے رکن ہوں گے اراکین کی تعداد بڑھائی نہیں جا سکے گی البتہ کسی رکن کو تبدیل کیا جا سکتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں