site
stats
عالمی خبریں

چارلی ایبڈو نے’معصوم ایلان‘ کے مزاحیہ خاکے چھاپ کر انسانیت کے دل دکھا دئیے

فرانس کے گستاخاکانہ خاکے چھاپنے والے میگزین نے ڈوب کر جاں بحق ہونے والے شامی پناہ گزین بچے ایلان کردی کا مزاحیہ خاکہ چھاپ کر ایک بار پھر انسانیت کی توہین کردی۔

شامی کمسن بچے کے اوندھے منہ ساحل پرپڑے ہونے کے مناظرنے ساری دنیا کے دلوں کو تڑپادیا تھااورترکی ، جرمنی اور انگلینڈ سمیت کئی یورپی ممالک نے شام کے پناہ گزینوں کے لئے اپنے دروازے کھول دئیے تھے۔

دوسری جانب مزاحیہ اورگستاخاکانہ خاکے چھاپنے کے لئےمشہورمیگزین چارلی ایبڈو نے معصوم ایلان کے مزاحیہ خاکے چھاپ دئیے جو کہ سوشل میڈیا پر احتجاجاً گردش کررہے ہیں اور ساری دنیا میں چارلی ایبڈو کے خلاف غم و غصہ پایا جاتا ہے۔

مذکورہ جریدے کے کارٹون میں مظلوم ایلان کو ساحل پر اوندھے لیٹا دکھایا گیا ہے جیسا کہ وہ ترکی کے ساحل پر پایا گیا تھا اوراسکے سرکے بالکل اوپر لکھا گیا ہے ’’منزل کے بے حد قریب‘‘ اور پس ِ منظرمیں میکڈونلڈز کی طرز کا ایک اشتہاری بورڈ بنایا گیا ہے جس پر لکھا گیا ہے ’’ ایک کی قیمت میں دو بچوں کا کھانا‘‘۔

اس سے قبل بھی یہ میگزین آزادی صحافت کے نام پر حضور اکرم صلی علیہ وآلہ وسلم کے گستاخاکانہ خاکے چھاپنے پر ساری دنیا کے مسلمانوں کی جانب سے احتجاج کا سامنا کرچکا ہے۔ میگزین کے دفتر پر ایک مسلح شخص نے حملہ بھی کیا تھا جس میں 17 افراد مارے گئے تھے۔

یاد رہے کہ تین سالہ ایلان کردی دولت اسلامیہ کے دہشت گردوں سے جان بچانے کے لئے شام کے شہرکابون سے اپنے اہل خانہ کے ہمراہ ترکی کی جانب فرار ہوا تھا اور کشتی الٹنے کے سانحے میں معصوم ایلان اسکا بھائی اور ماں سمیت کئی افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top