بنی گالا میں عمران خان کا گھر ریگولرائز نہیں ہوا تو جرمانہ دینا پڑے گا، چیف جسٹس -
The news is by your side.

Advertisement

بنی گالا میں عمران خان کا گھر ریگولرائز نہیں ہوا تو جرمانہ دینا پڑے گا، چیف جسٹس

اسلام آباد : چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے کہا ہے کہ بنی گالا میں سب سے پہلے عمران خان کا گھر ریگولرائز ہوگا، ریگولرائز نہیں ہوا تو پہلا جرمانہ بھی انہیں دینا پڑے گا۔

\تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں بنی گالہ غیرقانونی تعمیرات کیس کی سماعت ہوئی، اس موقع پر چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ بنی گالا میں تعمیرات ٹاؤن پلاننگ کے بغیر ہوئیں۔

اب تمام تعمیرات گرانا مناسب نہیں ہوگا. ہم تحریک انصاف والوں کی کارکردگی دیکھنا چاہتے ہیں کیونکہ ان ہی لوگوں نے اس مسئلے کے حل لیے درخواست دائر کی تھی۔

ان کا دوٹوک الفاظ میں مزید کہنا تھا کہ بنی گالہ میں سب سے پہلے عمران خان کا گھر ریگولرائز ہوگا، گھر ریگورائز نہیں ہے تو سب سے پہلے جرمانہ بھی عمران خان صاحب کو ہی دینا ہوگا۔

چیف جسٹس نے وکیل صفائی سے مکالمے میں کہا یہ کوئی سیاسی بیان نہیں جو میں دے رہا ہوں، بابراعوان صاحب آپ کو یہ وزیراعظم صاحب کو بتانا ہے۔

مزید پڑھیں: بنی گالہ تجاوزات کیس، سپریم کورٹ کا عمران خان کو جرمانہ ادا کرنے کا حکم

اس موقع پر اعلیٰ عدالت نے بنی گالہ میں ریگولرائزیشن سے متعلق کمیٹی تشکیل دے دی، چیف جسٹس نے کہا کہ سیکرٹری داخلہ کمیٹی کی سربراہی کریں گے، کمیٹی دس دن میں رپورٹ پیش کرے گی، انہوں نے کہا کہ راول جھیل کی آلودگی کا معاملہ الگ سے دیکھیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں