The news is by your side.

Advertisement

وزیراعلیٰ سندھ کا ایم کیو ایم رہنما اور وفاقی وزیر امین الحق کو ٹیلیفون

کراچی: شہر قائد کے سیاسی ماحول میں شدید تناؤ کے بعد وزیراعلیٰ سندھ نے ایم کیو ایم قیادت سے رابطہ کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ایم کیو ایم رہنما اور وفاقی وزیر امین الحق کو ٹیلیفون کیا اور وزیراعلیٰ ہاؤس کے روڈ پر ہونے والے واقعےپر گہرے افسوس کا اظہار کیا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ٹیلی فونک گفتگو میں کہا کہ سیاسی اختلافات کا حل بات چیت اور سیاسی طریقے سے کیا جائے، اس قسم کے واقعات کسی صورت نہیں ہونےچاہئیں۔

اس موقع پر دونوں رہنماؤں کی جانب سے لسانیت کے حوالے سے بیانات کی مذمت کی گئی، وفاقی وزیر امین الحق نے ٹنڈوالہ یار واقعے پر وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے احتجاج بھی کیا۔

بعد ازاں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے متحدہ پاکستان کے زخمی ایم پی اے صداقت حسین کو فون کیا، مراد علی شاہ نے ان طبیعت معلوم کی نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ پولیس کو کل ہی ان کو چھوڑنے کی ہدایات دی تھیں، اس قسم کے واقعات کسی صورت نہیں ہونے چاہئیں۔

یہ بھی پڑھیں: ایم کیو ایم پاکستان کا واقعے میں ملوث پولیس افسران معطل کرنے کا مطالبہ

واضح رہے کہ گذشتہ روز ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے بلدیاتی قانون کے خلاف نکالی گئی ریلی نے وزیراعلیٰ ہاؤس جانے کی کوشش کی تو پولیس سے مڈبھیڑ ہوگئی، کارکنان کی جانب سے دھکم پیل اور پولیس کی طرف سے کی گئی شیلنگ کے باعث حالات سخت کشیدہ ہوگئے تھے۔

پولیس نے اس موقع پر لاٹھی چارج کیا جس کے نتیجے میں ایم پی اے صداقت حسین سمیت کئی کارکنان زخمی بھی ہوئے جبکہ ایم کیو ایم اعلامیہ کے مطابق ان کا اسلم نامی کارکن اسپتال میں دوران علاج دم توڑ گیا۔

کارکن کی جاں بحق ہونے پر ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے یوم سیاہ منایا جارہا ہے جبکہ متحدہ پاکستان نے وزیراعلیٰ سندھ کے خلاف کارکن کے قتل کا مقدمہ درج کرانے کا اعلان کردیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں