The news is by your side.

Advertisement

کیا آپ کا بچہ ٹریننگ کپ میں کم دودھ پیتا ہے؟

کجھ والدین فکر مند ہو جاتے ہیں کہ جب سے انہوں نے اپنے بچہ کا فیڈنگ بوتل یا کپ چھڑوایا ہے تو ان کا بچہ کم دودھ یا پانی پی رہا ہے۔

تاہم، یہ ایک عارضی تبدیلی ہے اور والدین کو اطمینان کرنا چاہیے ۔ چھوٹے بچوں کونئے پینے کے کپ کو جاننے اور استعمال کے لیے کچھ وقت کی ضرورت ہے۔ایک دفعہ وہ کپ کے عادی ہو جائیں گے ، تو وہ آسانی سے اور جتنا چاہیں کے پیئں گے۔

ہمیں پینے کے کپ کو متعارف کروانے میں تاخیر اور بوتل کے استعمال کوطویل نہیں کرنا چاہیے ۔

ٹھوس غذا کی اشیاء کو متعارف کرانے اور مناسب وقت پر پینے کا کپ نہ صرف مناسب غذائیت بچوں کے لیے فراہم کرتے ہیں ، بلکہ ان کے اورو موٹر کی نشونما کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ چھوٹے بچوں کو پینے کا کپ 12 مہینے کی عمر سے شروع کروا دینا چاہیے، اور فیڈینگ بوتل کا استعمال 18 مہینے کی عمر کے بعد بند کر دینا چاہیے۔ تکمیلی کھانا کھلانے کے آغاز پر، شیر خوار بچے آہستہ آہستہ ٹھوس غذا زیادہ کثرت سے کھاتے ہیں، تاہم ان کے کُل دودھ کے استعمال میں بتدریج کمی ہوتی ہے۔ یہ دودھ چھوڑنے کی ایک اچھی علامت ہے۔ بار بار ، “صرف دودھ” کھانے کا پیٹرن 1 سال کی عمر کے لیے مناسب نہیں ہے۔ ان کے لیے آہستہ آہستہ دن میں 3 باقاعدہ کھانے اور اس کے درمیان 1-2 غذائیت سے بھر پور سنیکس کا نمونہ ہونا چاہیے۔

چھوٹے بچے اب دودھ بطور غذا پر انحصارنہیں کرتے ہیں۔ دودھ غذائیت سے بھرپور کھانا کھانے کی اشیاء کا ایک حصہ بن جاتا ہے ۔ والدین بچوں کو دودھ باقاعدہ کھانےیا سنیکس کے ساتھ پینے کے لیے دے سکتے ہیں ۔ آپ دودھ کو مختلف پکوان میں استعمال کر سکتے ہیں ، جیسے کہ ناشتے کے لیے دلیہ ، دوپہر کو سنیک میں مِنی سینڈوچ کے ساتھ دودھ کا ایک گلاس ،یا کھیر۔یہ بچوں کو دودھ پلانے کا عملی طریقہ ہے لیکن ان کے ٹھوس غذاء کھانے کی ضرورت پر سمجھوتا کیے بغیر۔

دودھ اور ڈیری مصنوعات کیلشیم کا اچھا ذریعہ ہیں، جو کہ ہڈیوں کی صحت اور نشونما کے لیے ضروری ہے۔ محکمہ صحت ایک سے پانچ برس کے بچوں کےلئے روزانہ 360- 480 ملی لٹر دودھ دینے کی تجویز کرتا ہے۔ دودھ کے علاوہ ڈیری مصنوعات (دہی ، خمیر)، کیلشیم ملی سویا مصنوعات (جیسا کہ ٹوفو، خشک سیم دہی)،اضافی کیلشیم سویملک اورہری سبزیاں کیلشیم سے بھرپور ہیں۔جیسے جیسے بچے بڑے ہوتے ہیں وہ کم دودھ پیتے ہیں ۔ والدین کو صحت مند کھانے کی ہدایات پر عمل کرنے اور ان کیلشیم سے بھرپور کھانے کی اشیاء کو روزانہ فراہم کرنے کے لئے مشورہ دیا جاتا ہے۔آپ کے لیے چند مندرجہ ذیل مشورے ہیں:

ناشتہ
دودھ کا دلیہ
نرم پنیر سے بھرے سینڈوچ (مثال کے طور پر: ابلے انڈے اور نرم پنیر سینڈوچ ، ٹیونا پنیر سینڈوچ )
دودھ یا اضافی کیلشیم سویمالک

دوپہر / رات کا کھانا

پھلیاں
پتوں والی ہری سبزیاں (مثال کے طور پر،چوئے ثم، خشک سیم دہی اور بھنا ہوا قیمہ

سنیک آپشن

تازہ پھل سادہ دہی کے ساتھ
کھیر
پھلوں کا ملک شیک (بغیر چینی کے گھر میں تیار کردہ ملک شیک)
میوے اور بیج کھائیں (مثال کے طور پر: کالے تلوں کا میٹھا سُوپ، بادام کا میٹھا سُوپ، ابلی مونگ پھلی )

Comments

یہ بھی پڑھیں