The news is by your side.

ہوا میں معلق ٹرین کی رونمائی، چین نے دھاک بٹھادی

بیجنگ: چین اپنی جدید میگلیو ٹرینوں کے دنیا بھر میں ایک مخصوص شناخت رکھتا ہے، ان ٹرینوں کو پٹری پر تیزی سے چلانے کے لیے الیکٹرو میگنیٹک نظام کا استعمال کیا جاتا ہے۔

اب چین نے جدید طرز کی اپنی پہلی معلق میگلیو لائن کی رونمائی کی ہے جس کو مستقل مقناطیسی قوت سے بنایا گیا ہے۔ اس حیرت انگیز شاہکار کے متعلق انجینئروں کا دعویٰ ہے کہ یہ توانائی کی ترسیل کے بغیر بھی ایک اسکائی ٹرین کو ہوا میں معلق رکھ سکتی ہے۔

ریڈ ریل نامی چھبیس سو فٹ طویل تجرباتی ٹریک جنوبی چین کے جیانگ شی صوبے کی شِنگ گو کاؤنٹی میں بنایا گیا ہے۔Skytrain monorail on test | Metro Report International | Railway Gazette  Internationalبین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اس ٹریک میں طاقتور مقناطیس استعمال کیے گئے ہیں جو مستقل مدافع قوت پیدا کرتے رہتے ہیں اور یہ قوت اتنی ہوتی ہے کہ اٹھاسی مسافروں کے ساتھ ایک ٹرین کو ہوا میں اٹھا سکے۔

موجودہ میگلیو لائنز کے برعکس یہ معلق ریل زمین سے 33 فٹ اوپر کام کرتی ہے، یہ ٹرین ریل کو چھوتی بھی نہیں اور اس کے نیچے 50 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے خاموشی کے ساتھ چلتی ہے۔Wuhan 'sky train' successfully completes high temperature test run - CGTN

الیکٹرو میگنٹس کے بجائے مستقل مقناطیس کے استعمال کے ساتھ مزاحمت میں کمی کا مطلب ہے کہ اس کے لیے تھوڑی مقدار میں بجلی چاہیے ہوگی جو انجن کو آگے دھکیلے گی۔

جیانگ شی یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے محققین کے مطابق اس کی تعمیری لاگت بھی کم ہے۔ یہ ٹرین سب وے کی لاگت کے دسویں حصے میں بنائی جاسکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں