The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس ویکسین کے حوالے سے چین کا اہم اقدام

بیجنگ: چین نے کووڈ 19 کی ویکسین کے حوالے سے ضوابط جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ویکسینز کی افادیت کی شرح کم از کم 50 فیصد ہو اور وہ کرونا وائرس کے خلاف قوت مدافعت 6 ماہ تک برقرار رکھے تب ہی اس کی منظوری دی جائے گی۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق چین کے سینٹر فار ڈرگ ایولوشن (سی سی ڈی ای) کا تجویز کردہ مسودہ سامنے آیا ہے جس میں کرونا وائرس ویکسین کے حوالے سے ضوابط دیے گئے ہیں۔

چین نے کہا ہے کہ کووڈ 19 کی روک تھام کے لیے ویکسینز کی منظوری اسی صورت میں دی جائے گی جب ان کی افادیت کی شرح کم از کم 50 فیصد اور کرونا وائرس کے خلاف قوت مدافعت 6 ماہ تک برقرار رکھ سکے گی۔

اگرچہ اس میں ویکسین کی کم از کم افادیت 50 فیصد قرار دی گئی ہے مگر ویکسینز کے لیے جو ہدف مقرر کیا گیا ہے وہ 70 فیصد آبادی کے لیے مؤثر ہونا ہے۔

مسودے کے مطابق ویکسینز کے ہنگامی استعمال کے لیے کم از کم افادیت کی شرح رکھی گئی ہے اور ان میں ایسی ویکسین بھی شامل ہوگی جس کا کلینیکل ٹرائل مکمل نہ ہوا ہو مگر افادیت کو دیکھتے ہوئے اس کے استعمال کی منظوری دے دی جائے گی۔

ویکسین کی افادیت کے حوالے سے چینی گائیڈ لائنز میں عالمی ادارہ صحت اور یو ایس فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کی ہدایات کو مدنظر رکھا گیا ہے۔

سی سی ڈی ای کے مطابق اس معیار کا تعین عالمی ادارہ صحت کی ہدایات اور 50 سے زائد ماہرین اور 37 سائنسی ٹیموں سے مشاورت کے بعد کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ چین میں 4 کرونا ویکسینز کلینیکل ٹرائلز کے آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں