The news is by your side.

Advertisement

چینی باشندوں کا یوگنڈا کی خواتین سے شادیوں کا رجحان

کمپالا: مشرقی افریقہ کے ملک یوگنڈا کے شہری اپنے ملک میں چینیوں کی آمد میں بے تحاشہ اضافے سے از حد پریشان ہوگئے ہیں۔ ان چینی شہریوں میں یوگنڈا کی خواتین سے شادی کا رجحان فروغ پا رہا ہے۔

گزشتہ ایک دہائی سے جہاں چین نے دنیا بھر کی مارکیٹوں اور معیشت پر اپنا قبضہ جما لیا ہے وہیں افریقی ممالک بھی چینیوں کی اس اقتصادی مداخلت سے محفوظ نہیں۔

چین کئی افریقی ممالک میں بھاری سرمایہ کاری کر چکا ہے جس کی وجہ سے چینی باشندوں کی بڑی تعداد ان ممالک میں رہائش بھی اختیار بھی کر رہی ہے۔

تاہم یوگنڈا میں چینی شہریوں نے مقامی خواتین سے شادیاں بھی شروع کردی ہیں اور اب اس رجحان میں اس قدر اضافہ ہوگیا ہے کہ یوگنڈا کے مرد اور حکام تشویش میں مبتلا ہوگئے ہیں۔

شادیوں کی وجہ؟

بین الاقوامی اخبارات کی رپورٹس کے مطابق چینی افراد کے یوگنڈا کی خواتین سے شادی کرنے کی وجہ وہاں اپنے کاروبار میں وسعت اور معاشی فوائد میں اضافہ کرنا ہے۔

یہ شادیاں بعض اوقات جھوٹی بھی ثابت ہوتی ہیں جب شادی کرنے والی خواتین اور ان کے اہل خانہ کو علم ہوتا ہے کہ اس کے چینی شوہر کی چین میں بھی بیوی اور بچے موجود ہیں۔

یوگنڈا کے حکام نے کئی ایسے چینی شہریوں کو گرفتار بھی کیا ہے جنہوں نے جھوٹی شادیاں کیں تاہم ان کے ملک سے فرار ہونے سے قبل ہی انہیں حراست میں لے لیا گیا۔

حکام اب مسلسل، اور مستقل بنیادوں پر دھوکے باز چینی شہریوں کے خلاف کارروائیاں کر رہے ہیں، ان میں کئی چینی باشندے غیر قانونی طور پر بھی یوگنڈا میں مقیم ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں