The news is by your side.

Advertisement

ایک اور ملک نے سائنوفارم سے ضعیف افراد کی ویکسینیشن شروع کر دی

وینتیان: جنوب مشرقی ایشیائی ملک لاؤس نے سائنوفارم ویکسین سے ضعیف افراد کی ویکسینیشن شروع کر دی۔

تفصیلات کے مطابق لاؤس نے 60 سال سے زائد عمر والے افراد کے لیے چین کی سائنوفارم ویکسین سے ویکسینیشن مہم شروع کر دی، اس سلسلے میں عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور لاؤ وزارت صحت نے اجازت دے دی ہے۔

وزارت صحت کے مطابق سائنوفارم ویکسین نہ صرف 60 سال سے زائد عمر کے شہریوں کو لگائی جا رہی ہے بلکہ ہیلتھ ورکرز بھی اس مہم کا حصہ بنایا گیا ہے۔

اس ویکسینیشن مہم کے لیے چین کی جانب سے لاؤس کو سائنوفارم ویکسین کی تیسری کھیپ بہ طور عطیہ فراہم کی گئی ہے، ویکسین کی حوالگی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے لاؤ کے نائب وزیر اعظم اور کرونا ٹاسک فورس کے چیئرمین کیکیو خیخمپھیٹون نے کہا کہ چینی ویکسینز محفوظ، قابل اعتماد اور مؤثر ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ملک میں پہلے ہی زیادہ خطرے کا سامنا کرنے والے سرحدی اہل کاروں، طبی کارکنوں اور کچھ شہریوں کی سائنوفارم ویکسین سے ویکسی نیشن کر دی گئی ہے۔

سرکاری رپورٹ کے مطابق لاؤس میں اب تک 7 لاکھ افراد کو کرونا وائرس کی پہلی ڈوز، جب کہ 4 لاکھ سے زائد شہریوں کو دوسری ڈوز لگائی جا چکی ہے، لاؤ کی وزارت صحت رواں سال کے آخر تک ملک کی 72 لاکھ آبادی کے 50 فی صد کو ویکسین لگانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں