The news is by your side.

Advertisement

’’پاکستان میں کرونا کے خلاف کلوروکوئین سے متعلق ریسرچ جاری ہے‘‘

کراچی: وائس چانسلر ہیلتھ یونیورسٹی لاہور ڈاکٹر جاوید اکرم نے کہا ہے کہ پاکستان میں کروناوائرس کے خلاف ’’کلوروکوئین‘‘ نامی دوا سے متعلق ریسرچ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر جاوید اکرم نے بتایا کہ کلوروکوئین پر ریسرچ کررہے ہیں دیکھتے ہیں یہ پاکستان میں کس حدتک کام کرے گا، امریکی صدر ٹرمپ نے کلوروکوئین کا بتایا تو اس کی سیل بہت بڑھ گئی۔

کرونا سے جنگ: وزیراعظم کا ریلیف فنڈ کے قیام اور ٹائیگرفورس بنانے کا اعلان

ان کا کہنا تھا کہ کلوروکوئین کو ڈاکٹر کی ہدایت کے بغیر استعمال نہیں کیا جاسکتا، کروناوائرس زیادہ تر کیسز میں پھیپھڑوں کو متاثر کرتی ہے، لوکل ٹرانسمیشن میں مسلسل اضافہ نقصان دہ ہوسکتا ہے، پاکستان میں کروناوائرس چین والا نہیں لیکن مشابہت رکھتا ہے، مہلک وائرس سے بچنے کے لیے احتیاط بہت ضروری ہے۔

دریں اثنا ڈاکٹر شمائل داؤد نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے ساتھ ماسک کو بھی آبادی استعمال کررہی ہے، پاکستان میں کروناوائرس کا کم پھیلاؤ ماسک کی بڑی وجہ ہے، کروناوائرس ابھی ختم نہیں ہوا ہم نے متاثرین کی تعداد کم کی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ تعداد تیزی سے بڑھنے کی وجہ سے لاک ڈاؤن اور ماسک کا استعمال کیا گیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں