The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: چوہوں سے متعلق حیران کن انکشاف

لندن: جانوروں کے معالج اور ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ کروناوائرس کے تناظر میں نافذ لاک ڈاؤن سے چوہوں کی پیدائش میں اضافہ ہوا اور انہیں غذا تک رسائی کے لیے بہترین مواقع ملے ہیں۔

برطانوی ماہرین کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن کے باعث ملک میں دفاتر اور کاروباری مراکز بند ہونے سے چوہوں نے دفاتر اور دیگر مقامات کو اپنا گڑھ بنایا اور لوگوں کی آمدورفت نہ ہونے سے انہوں نے اپنی سرگرمیاں بھی بڑھا لیں، اس طرح ماضی کے مقابلے میں چوہوں کی پیدائش میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق لاک ڈاؤن کی وجہ سے شہریوں کی بڑی تعداد گھروں میں موجود ہے جس کے باعث کھانے پینے کی اشیاء بھی زیادہ استعمال ہورہی ہیں اور بچا کچا کھانا اور کچرا چوہوں کی غذا کا باعث بن رہا ہے۔

ماہرین کا ماننا ہے کہ برطانیہ میں جب سے لاک ڈاؤن نافذ کیا گیا اس وقت سے موسم کافی گرم رہا ہے، ممکنہ طور پر موسمی تبدیلی بھی چوہوں کی افزائش میں اضافہ بنی ہے، چوہے گرم موسم میں بچے دیتے ہیں۔

برطانیہ میں چوہوں اور کیڑے مکوڑوں کو کنٹرول کرنے والے ادارے کا کہنا ہے کہ چوہوں کی سرگرمیاں بڑھنے سے ماضی کے بنسبت ان کے کام میں 60 فیصد تک اضافہ ہوا، زیادہ تر شکاتیں کاروباری اور رہائشی عمارتوں سے موصول ہوئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں