جمعرات, مئی 23, 2024
اشتہار

رفح پر بمباری تیز ہوتے ہی سی آئی اے چیف قاہرہ پہنچ گئے

اشتہار

حیرت انگیز

قاہرہ: صہیونی فورسز کی جانب سے جنوبی غزہ کے علاقے رفح پر بمباری تیز ہوتے ہی سی آئی اے چیف قاہرہ پہنچ گئے ہیں، تاکہ غزہ میں عارضی جنگ بندی کے لیے کسی معاہدے پر پیش رفت ہو سکے۔

الجزیرہ کے مطابق سی آئی اے چیف ولیم برنز عارضی جنگ بندی کے معاہدے پر بات چیت کے تازہ ترین دور کے لیے قاہرہ پہنچ گئے ہیں، اسرائیلی یرغمالیوں اور فلسطینی قیدیوں کی رہائی کے بدلے جنگ عارضی طور پر روکنے کی کوشش تیز تر ہو گئی ہے۔

ولیم برنز کا یہ دورہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب واشنگٹن اور اقوام متحدہ نے اسرائیل کو رفح میں زمینی کارروائی شروع کرنے کے خلاف خبردار کیا ہے، اور کہا ہے کہ کسی منصوبے کے بغیر رفح آپریشن سے گریز کیا جائے، کیوں کہ وہاں جنگ سے پناہ لینے والے تقریباً 14 لاکھ فلسطینی پہلے ہی ناگفتہ بہ حالت میں زندگی گزار رہے ہیں۔

- Advertisement -

غزہ میں اسرائیلی جارحیت سے مزید 67 فلسطینی شہید، 3 اسرائیلی یرغمالی بھی ہلاک

واضح رہے کہ غزہ میں طویل جنگ بندی کے سلسلے میں قطر اور مصر تندہی کے ساتھ مذاکرات میں مصروف ہیں، حالیہ ہفتوں میں ولیم برنز نے ایک معاہدے پر بات کرنے کے لیے اسرائیلی موساد انٹیلی جنس سروس کے سربراہ ڈیوڈ بارنیا سے بھی ملاقات کی ہے۔

ادھر اردن کے شاہ عبداللہ دوم نے دورہ واشنگٹن کے موقع پر امریکی صدر جو بائیڈن سے کہا ہے کہ دنیا رفح پر اسرائیل کے منصوبہ بند زمینی حملے کی ’متحمل نہیں ہو سکتی‘۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں