The news is by your side.

Advertisement

سول ایوی ایشن کو ساڑھے تین ارب سے زائد کا نقصان

اسلام آباد: کورونا وائرس کے پیش نظر بین الاقوامی پروازوں کی بندش کے باعث پاکستان کی ہوا بازی کی صنعت کو ایک ماہ میں ساڑھے تین ارب سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر میں کورونا وائرس سے جہاں عالمی معیشت کو زبردست دھچکا پہنچا ہے وہیں پروازوں کی بندش سے ہوا بازی کی صنعت بری طرح متاثر ہوئی ہے۔

بین الاقوامی پروازوں کی بندش سے پاکستانی ہوابازی کی صنعت پر منفی اثرات پڑے ہیں اور صرف مارچ کے مہینے میں سول ایوی ایشن کو 3ارب 61کروڑ روپے سےزائد کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

اے آر وائی نیوز کو موصول سی اےاے نقصان کی سرکاری دستاویز کے مطابق مارچ کے پہلے 15دنوں میں 212 فلائٹس منسوخ ہوئیں جب کہ ایک ماہ کےدوران کل 1681 پروازیں منسوخ ہوئیں۔

سی اےاے کی دستاویز میں بتایا گیا ہے کہ پروازیں منسوخ، لینڈنگ و دیگر چارجز کی مد میں 2723 ملین روپےکا نقصان ہوا ہے، اسی طرح فضائی حدود کے عدم استعمال پر895ملین روپےکانقصان اٹھانا پڑا ہے۔

واضح رہے کہ وفاقی حکومت نے کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں بین الاقوامی فلائٹ آپریشن بند کر رکھا ہے البتہ بیرون ممالک میں پھنسے پاکستانیوں کو وطن واپس لانے اور یہاں سے غیر ملکیوں کو ان کے ممالک پہنچانے کے لیے خصوصی پروازیں آپریٹ کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں