The news is by your side.

Advertisement

گندگی میں جنازے کی تصویر، اوکاڑہ کے ممبران اسمبلی سمیت کونسلز اور چئیرمین اگلی سماعت پر طلب

اسلام آباد : سوشل میڈیا پر  وائرل گندگی میں جنازے کی تصویر سے متعلق کیس میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے اوکاڑہ کےایم پی اے، ایم این اے اور  میونسپل چئیرمین کو اگلی سماعت پر طلب کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سوشل میڈیا پر وائرل گندگی میں جنازے کی تصویر سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی،حجرہ شاہ مقیم تحصیل اوکاڑہ نایاب کاشف کے مقامی کونسلر عدالت میں پیش ہوئے۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ دیکھیں جنازہ لے کر لوگ ایسی جگہ سے گزر رہے ہے، جہاں لوگوں کے کپڑے ناپاک ہوئے۔

چیف جسٹس نے اوکاڑہ کےایم پی اے ،ایم این اے اور میونسپل چئیرمین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا کہ تینوں حضرات ذاتی حیثیت میں جمعرات کے روز پیش ہوں۔

نوٹسز راو اجمل ایم این اے ،صوبائی وزیر ہائیر ایجوکیشن ایم پی اے رضا گیلانی اور چئیرمین میونسپل کمیٹی کو جاری کئے گئے۔

سپریم کورٹ نے جنازہ گاہ ،قبرستان اور ساتھ کی زمین پر ناجائز قبضے کے حوالے سے وضاحت طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت جمعرات تک ملتوی کر دی۔

یاد رہے کہ 21 مارچ کو چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی تصویر کا نوٹس  لیا تھا،  جس میں ایک جنازے کو سیوریج کے پانی سے بھری گلی میں سے لے جایا جارہا تھا۔


مزید پڑھیں : سیوریج کے پانی پر سے گزرتے جنازے پر چیف جسٹس کا نوٹس


چیف جسٹس نے عدالت میں موجود میڈیا اور دیگر نمائندگان سے کہا تھا کہ اس علاقے کی نشاندہی کریں کہ یہ کون سا علاقہ ہے۔

جس کے بعد سوشل میڈیا پر  جنازے کی وائرل ہونے والی تصویر صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ میں ہجرہ شاہ مقیم کے محلہ زاہد پورہ کی نکلی تھی اور چیف جسٹس کے نوٹس کے بعد ضلعی انتظامیہ نے علاقے میں نکاسی آب کا کام شروع کردیا گیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں