چیف جسٹس کے دل میں‌ تکلیف، انجیوپلاسٹی کامیاب -
The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس کے دل میں‌ تکلیف، انجیوپلاسٹی کامیاب

روالپنڈی: چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار عارضہ قلب میں مبتلا ہوگئے، انہیں دل کی تکلیف کے بعد انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں داخل کرایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس کو دل میں درد کی شکایت ہوئی جس کے بعد انہیں روالپنڈی میں قائم انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پہنچایا گیا، ڈاکٹرز نے فوری داخل کر کے اُن کے کچھ ٹیسٹ کروائے۔

رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی کہ جسٹس میاں ثاقب نثار کے دل کی ایک شریان بند ہے، اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے ڈاکٹرز نے فوری طور پر انجیوپلاسٹی کا فیصلہ کیا۔

آر آئی سی کے سربراہ نے کچھ دیر قبل چیف جسٹس کی طبعیت سے متعلق میڈیا نمائندگان کو آگاہ کیا کہ کامیاب انجیوپلاسٹی کے بعد جسٹس ثاقب نثار کے دل کی شریان کھول دی گئی وہ اس وقت مکمل صحت مند ہیں۔

مزید پڑھیں: پاکستانیوں کی اکثریت چیف جسٹس کی کارکردگی سے مطمئن، سروے رپورٹ جاری

واضح رہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان کی کارکردگی سے متعلق گزشتہ ہفتے گیلپ سروے کروایا گیا تھا جس میں عوام کی اکثریت نے اُن کے اقدامات کو سراہا تھا۔

یاد رہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان کی مدتِ ملازمت آئندہ برس ختم ہونے جارہی ہے، منصفِ اعلیٰ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے بے باک فیصلے کیے جن کو عوامی سطح پر پذیرائی ملی۔

جسٹس میاں ثاقب نثار نے عوامی مسائل کا بھی نوٹس لیا، موبائل کمپنیوں کی جانب سے ٹیکس کی کٹوتی ہو یا پھر نجی اسکولوں، کالجز یا اسپتالوں کی فیس چیف جسٹس نے سب کا فیصلہ سنایا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں