چیف جسٹس کا چلاس میں اسکولوں کی آتشزدگی پرازخود نوٹس -
The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس کا چلاس میں اسکولوں کی آتشزدگی پرازخود نوٹس

اسلام آباد: چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے چلاس میں اسکولوں کی آتشزدگی پرازخود نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے گلگت کے علاقے چلاس میں لڑکیوں کے 12 اسکولوں کو نذر آتش کرنے پرازخود نوٹس لیتے ہوئے سیکریٹری داخلہ، سیکریٹری امور وزارت گلگت بلتستان سے رپورٹ طلب کرلی۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ آتشزدگی کے واقعات کی رپورٹ 48 گھنٹے میں پیش کی جائے۔

دوسری جانب ترجمان گلگت بلتستان حکومت کا کہنا ہے دیامرمیں اسکولزجلانے والوں کی تلاش میں سیکیورٹی اداروں نے داریل وتانگیر میں چھاپے مارے اور4 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے۔

چلاس میں لڑکیوں کے 12 اسکول نذر آتش

خیال رہے کہ گزشتہ روز نامعلوم افراد نے دیامر میں بچوں کے 12 اسکولوں کو نذرآتش کردیا تھا جس پرانتظامیہ نے نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی۔

دیامر کے صدیق اکبرچوک پرشہریوں کی جانب سے اسکولوں کو جلائے جانے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا تھا اور اسے بچوں کے روشن مستقبل پرحملہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس طرح کے واقعات افسوس ناک اور ناقبل قبول ہیں۔

عمران، بلاول اور ملالہ کی مذمت، نگراں وزیراعظم نے رپورٹ طلب کرلی

واضح رہے کہ گزشتہ روز پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے ٹویٹرپر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ چلاس میں بچیوں کے تعلیمی ادارے جلانا افسوس ناک ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ مستقبل میں ایسے واقعات کی روک تھام یقینی بنائیں گے، بچیوں کی تعلیم، اسکولوں کی سیکیورٹی ترجیحات ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں