The news is by your side.

Advertisement

سولرلائٹس کیس، وزیراعلیٰ سندھ نے نیب میں پیش ہوکر بیان ریکارڈ کرادیا

اسلام آباد : وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے جعلی اکاؤنٹس اورسولرلائٹس کیس میں نیب میں پیش ہوکر بیان ریکارڈ کرادیا ، ان پر سولر لائٹیس کیس میں غیرقانونی ٹھیکہ دینے کا الزام ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ آج صبح 9 بجے نیب راولپنڈی کے دفتر پہنچے، صوبائی وزیر سید ناصر حسین شاہ اور مشیر بیرسٹر مرتضیٰ وہاب بھی مراد علی شاہ کےہمراہ تھے۔

مراد علی شاہ کی پیشی کے موقع پر سیکیورٹی کے انتظامات کرتے ہوئے نیب اولڈ ہیڈکوارٹر کے باہر اور اطراف میں پولیس کے دستے تعینات کئے گئے تھے۔

جس کے بعد وزیر اعلیٰ سندھ نیب جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے ، نیب کی مشترکہ انویسٹی گیشن ٹیم نےتقریبا دو گھنٹے تک مراد علی شاہ سے پوچھ گچھ کی۔

خیال رہے نیب راولپنڈی نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو آج گیارہ بجے طلب کررکھا تھا ، ان پر سولر لائٹیس کیس میں غیرقانونی ٹھیکہ دینے کا الزام ہے۔

یاد رہے 17 ستمبر 2019 میں نیب نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو طلب کیا تھا لیکن وہ نیب میں پیش نہیں ہوئے تھے ان کی جگہ پرنسپل سیکریٹری نیب میں پیش ہوئے تھے، نیب نے وزیر اعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری کو سوال نامہ دیا تھا، 8 سوالات پر مشتمل سوال نامہ پرنسپل سیکریٹری کے ذریعے مراد علی شاہ کو پہنچایا گیا تھا۔

اس سے قبل 25 مارچ 2019 میں وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کو نیب اسلام آباد نے بھی جعلی اکاؤنٹس کیس میں طلب کیا تھا۔ جہاں انہوں نے نیب کی پانچ رکنی ٹیم کے سامنے پیش ہو کر اپنا بیان ریکارڈ کرایا تھا، نیب نے مراد علی شاہ سے ٹھٹھہ، دادو شوگرملز کیس میں پوچھ گچھ کی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں