The news is by your side.

Advertisement

کانگو: سونے کی کان پر حملے میں 35 ہلاک

برازاویلے: جمہوریہ کانگو میں ایک سونے کی کان پر ہلاکت خیز حملے میں 35 افراد ہلاک ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق افریقی ملک کانگو میں سونے کی ایک کان پر مسلح افراد کے حملے میں کم سے کم 35 افراد مارے گئے ہیں، جب کہ متعدد زخمی ہو گئے۔

یہ واقعہ کانگو کے شمال مشرقی صوبے ایتوری میں پیش آیا، مقامی میئر ژاں پیئر بیکیلیسندے نے میڈیا کو بتایا کہ مرنے والوں میں ایک چار ماہ کا بچہ اور ایک خاتون بھی شامل ہیں، ایک مقامی سول سوسائٹی رہنما کا کہنا ہے کہ مارے جانے والوں کی تعداد 50 ہے۔

انھوں نے کہا کہ یہ ابتدائی تعداد ہے، کیوں کہ وہاں دوسرے شہری بھی مارے گئے ہیں، جن کی لاشیں سونے والے گڑھوں میں پھینکی گئی تھیں اور کئی دیگر شہری بھی لا پتا ہیں۔

بیکیلیسندے کے مطابق مقامی لوگ 29 لاشوں کی پہچان کر سکے جنھیں پلوٹو گاؤں لایا گیا، جب کہ 6 جلی ہوئی لاشین معدن کے پاس ہی دفن کی گئی تھیں۔

سول سوسائٹی رہنما چیروبن کوکنڈیلا نے بتایا کہ سونے کی کان پر کوڈیکو کے مسلح افراد نے حملہ کیا، انھوں نے دکانیں بھی لوٹیں، سونا نکالنے والوں سے سونا چھینا، اور مقامی گھر بھی جلا دیے جس کی وجہ سے علاقہ ناقابل رہائش ہو گیا ہے۔

مقامی عہدے دار نے بتایا کہ سونے کی معدن اور فوجی چھاؤنی کے درمیان فاصلہ زیادہ ہونے کی وجہ سے مدد دیر میں پہنچی، واضح رہے کہ کوڈیکو نامی اس گروہ پر اس سے پہلے بھی ایتوری صوبے میں مقامی لوگوں کے قتل عام کا الزام لگا تھا۔

کانگو کے مشرقی علاقوں میں گزشتہ 20 برسوں سے سرکاری فوج اور باغی گروہوں میں جنگ جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں