The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت کا آرٹیکل 62‘63 میں ترمیم لانے کا فیصلہ

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کی وفاقی حکومت نے آئین کے آرٹیکل 62‘ 63 میں ترمیم پر غور کرنا شروع کردیا‘ سابق وزیراعظم نواز شریف کو اسی قانون کےتحت نا اہل قراردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے قانون زاہد حامد کہتے ہیں کہ 62‘ 63 کے قانون میں نااہلی کی مدت کا کوئی تذکرہ نہیں ہے۔

وفاقی وزیر برائے قانون زاہد حامد کا کہنا تھا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ62‘63 کے تحت ہونے والی نا اہلی کی مدت پانچ سال سے بھی کم ہونی چاہیے۔ زاہد حامد نے یہ بھی کہا کہ ہم اس حوالے سے مسودہ جلد پیش کریں گے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا آرٹیکل 62،63 میں ترمیم کا عندیہ*

 یاد رہے کہ پاناما کیس میں سابق وزیر اعظم نوازشریف کو سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بنچ نے اسی آئین کی شق کے تحت نا اہل قرار دیا تھا اور نیب کو ان کے خلاف ریفرنس بھیجنے کا حکم بھی دیا تھا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف نا اہلی کے بعد جی ٹی رو ڈ کے ذریعے تین دن میں اسلام آباد سے لاہور پہنچے اور راستے میں متعدد مقامات پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے سپریم کورٹ کے ججوں اور آئین کی شق نمبر 62‘ 63 کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

خیال رہے کہ آئین کی شق 62‘ 63 عوامی نمائندگان سے صادق او ر امین ہونے کامطالبہ کرتی ہے اور اس آئین کے مطابق تمام سیاستدا نوں کا اسلام کے بنیادی احکامات پر پورا اترنا لازم ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں