The news is by your side.

Advertisement

بی آر ٹی پر تعمیراتی کام 23 مارچ کو ختم ہو جائے گا: شوکت یوسف زئی

پشاور: وزیر اطلاعات خیبر پختون خوا شوکت یوسف زئی نے کہا ہے کہ بی آر ٹی پر تعمیراتی کام 23 مارچ کو ختم ہو جائے گا۔ انھوں نے پشاور میٹرو کی لاگت سے متعلق دعوؤں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ منصوبے کی لاگت نہیں بڑھی۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے شوکت یوسف زئی نے کہا کہ پشاور میٹرو کی لاگت نہیں بڑھی ہے، بی آر ٹی منصوبہ 29 ارب کا ہے، 70 ارب کا نہیں۔

شوکت یوسف زئی کا کہنا تھا کہ منصوبہ مکمل ہو جائے تو پھر جو انکوائری کرنی ہے آ کر کر لیں، ایشین ڈویلپمنٹ بینک بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کی نگرانی کر رہا ہے۔

کے پی وزیرِ اطلاعات کا یہ بھی کہنا تھا کہ بی آر ٹی کے لیے بسیں مرحلہ وار آئیں گی، مئی کے آخر تک بی آر ٹی کی تمام بسیں آ جائیں گی۔

انھوں نے کہا کہ معلوم ہے کہ بی آر ٹی کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، جب کوئی ترقیاتی کام ہوتا ہے تو لوگوں کو مشکلات تو ہوتی ہیں۔

شوکت یوسف زئی نے کہا کہ پشاور میٹرو لاہور میٹرو سے مختلف ہے، سیاسی مخالفین کے پاس تنقید کے سوا کچھ نہیں، 6 ماہ میں 7 کلو میٹر پل کی تعمیر کی گئی۔

خیال رہے کہ بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کو لاہور میٹرو سے سستا اور معیاری منصوبہ قرار دیا گیا تھا، یہ 2017 میں شروع کیا گیا تھا، اس کے افتتاح کی تاریخ چھ بار تبدیل کی جا چکی ہے، تاہم اب اس کے لیے 23 مارچ کی تاریخ مقرر کر دی گئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں