The news is by your side.

Advertisement

کورونا ویکسین بڑی تعداد میں موجود ہے لیکن لوگ ویکسین نہیں لگوا رہے: ڈاکٹر فیصل سلطان

اسلام آباد : پاکستان میں ڈیڑھ کروڑ ویکسین کی موجودگی کے باوجود اب تک صرف بیس لاکھ ڈوز لگائی گئیں، ڈاکٹر فیصل سلطان کا کہنا ہے شہری ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ویکسین لگوائیں۔

دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی کرونا وائرس کی صورتحال سنگین ہوتی جارہی ہے جس کا پھیلاؤ  روکنے کےلیے حکومت کی جانب سے کئی شہروں میں لاک ڈاؤن لگاکر فوج کو طلب کیا گیا ہے جب کہ کچھ شہروں میں لاک ڈاؤن کا نفاذ تاحال نہیں ہوا لیکن مزید پابندیاں عائد کردی گئی ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے اپنے ٹوئٹ میں بتایا ہے کہ اب تک پاکستان میں 20 لاکھ کرونا ڈوز لگ چکی ہیں جب کہ گزشتہ روز پاکستان میں ایک لاکھ سترہ ہزار شہریوں کو کرونا ویکسین لگائی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ جون 2021 تک پاکستان پہنچنے والی ویکسین کی تعداد ایک کروڑ 87 لاکھ ہوجائے گی، اب تک پاکستان آنے والی ویکسین میں سے 78 فیصد ویکسین حکومت نے خریدی ہیں۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نے بتایا کہ اپریل میں 30 لاکھ ویکسین آئیں جبکہ مئی میں 67 لاکھ ویکسین اور جون میں 63 لاکھ ویکسین کی پاکستان آمد متوقع ہے۔

اب تک صرف 20 لاکھ ویکسین لگائی ہے جب کہ پڑوسی ملک بھارت میں ایک سو تیس ملین ویکسین لگوائی جاچکی ہیں۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں ڈیڑھ کروڑ ویکسین موجود ہیں لیکن عوام ویکسینیشن کروانے کےلیے تیار نہیں ہے، عوام کو چاہیے کے کرونا کی بگڑتی ہوئی صورتحال کو دیکھ کر ذمہ داری کا ثبوت دیتے ہوئے ویکسینیشن کروائیں۔

پاکستانی عوام 1176 پر اپنا شناختی کارڈ نمبر ارسال کرے، جس کے بعد انہیں ویکسینیشن اور ویکسین سینٹر سے متعلق آگاہی فراہم کردی جائے گی۔

حکومت کی جانب سے 40 سال سے زائد عمر کے افراد کی رجسٹریشن کا سلسلہ بھی شروع ہوچکا ہے تاکہ ویکسینیشن کا عمل جلد از جلد مکمل کیا جاسکے۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے اسد عمر کے ٹوئٹ (گزشتہ روز 1 لاکھ 17 ہزار افراد نے ویکسین لگوائی) پر وفاقی حکومت کی کاوشوں کر سراہتے ہوئے کہا کہ مذکورہ کامیابی اس لیے حاصل ہوئی کیوں کہ وفاقی حکومت نے ویکسینیشن سے متعلق پابندیوں کو کم کیا ہے۔

مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ ہم شروع سے بحیثیت حکومت اور بحیثیت شہری یہ تقاضہ کررہے تھے کہ جو بھی شہری ویکسین لگوانا چاہتا ہے وفاقی حکومت اسے ویکسین فراہم کرے۔

خیال رہے کہ پاکستان میں پہلی مرتبہ ایک روز کے دوران 201 کرونا مریضوں نے زندگی کی بازی ہاری ہے جب کہ 24 گھنٹے کے دوران مزید 5 ہزار سے زائد نئے کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ مثبت کیسز کی شرح 10.77 فیصد ہوگئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں