The news is by your side.

Advertisement

کیا مردہ جسم سے بھی کورونا وائرس پھیل سکتا ہے؟

عالمی وبا کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کے بعد لوگوں کے ذہن میں یہ سوال گردش کرتا رہتا ہے کہ کیا اس وائرس سے ہلاک ہونے والے افراد کے جسم سے انفیکشن پھیلنے کا خطرہ رہتا ہے؟

اس سوال کا کوئی مصدقہ جواب ابھی تک سامنے نہیں آیا تاہم اب ایک ایسی تحقیقی رپورٹ سامنے آئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ مردہ جسم میں کورونا وائرس 12 سے 24 گھنٹے کے درمیان ختم ہو جاتا ہے۔

اس سوال کا جواب حاصل کرنے کے لیے گزشتہ ایک سال کے دوران تحقیق کی گئی ہے جس کے بعد ماہرین اس نتیجہ پر پہنچے ہیں کہ کورونا وائرس مردہ جسم میں 12 گھنٹے کے بعد زندہ نہیں رہتے۔

بھارتی ادارے ایمس میں فارنسک ڈیپارٹمنٹ کے چیف ڈاکٹر سدھیر گپتا نے بتایا ہے کہ کورونا متاثرہ شخص کے مرنے کے 12 سے 24 گھنٹے بعد اس کی ناک یا گلے سے انفیکشن پھیلنے کا اندیشہ بالکل بھی نہیں ہے کیونکہ تب تک مردہ جسم میں وائرس زندہ نہیں رہ سکتا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ایمس میں گزشتہ ایک سال میں اس سوال کا جواب حاصل کرنے کے لیے مکمل اور مربوط تحقیق کی گئی ہے، اس کے بعد ڈاکٹرز اس نتیجہ پر پہنچے ہیں کہ وائرس مردہ جسم میں 12 گھنٹے کے بعد زندہ نہیں رہتے۔

اس حوالے سے ڈاکٹر سدھیر گپتا نے بتایا کہ گزشتہ ایک سال کے دوران کورونا متاثرہ اشخاص کے مردہ جسم پر ایمس کے فورنسک ڈیپارٹمنٹ میں ریسرچ کی گئی۔

اس ریسرچ میں پوسٹ مارٹم کے بعد پایا گیا کہ وائرس 12 گھنٹے کے بعد سرگرم نہیں رہتے۔ انھوں نے ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ ایمس کے فورنسک ڈیپارٹمنٹ میں کورونا سے متاثر تقریباً 100 مردہ جسموں پر تحقیق کی گئی ہے۔ ان مردہ جسموں میں 12 سے 24 گھنٹے کے درمیان کورونا وائرس کی موجودگی کی جانچ پڑتال کی گئی جس کا منفی نتیجہ سامنے آیا۔

ڈاکٹر گپتا نے مزید بتایا کہ جسم کے کسی بھی اورل یا نیزل (منھ یا ناک) کیویٹی میں 24 گھنٹے کے بعد کورونا وائرس زندہ نہیں رہتا۔ اس لیے مرنے کے 12 گھنٹے بعد کسی کورونا متاثرہ شخص کے جسم سے وائرس کا انفیکشن ہونا تقریباً ناممکن ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی طرح کی انہونی سے بچنے کے لیے ہم نے مردہ جسم میں اورل اور نیزل کیویٹی کو پوری طرح سے بند کر دیا تاکہ اگر کوئی سیال مادہ ان ذرائع سے ہو کر نکلے تو اس سے انفیکشن نہ ہو۔ اس کے علاوہ احتیاطاً ہم مردہ جسم کی آخری رسومات ادا کرتے وقت طبی اہلکاروں کو پروٹیکٹو گیئر پہننے کا مشورہ دیتے ہیں جس میں فیس ماسک اور فیس کور، پی پی ای کِٹ ضروری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں