The news is by your side.

Advertisement

نیٹو ہیڈکوارٹرز کے اسٹاف ممبر میں کرونا کی تصدیق، اعلامیہ جاری

برسلز : بیلجیئم میں واقع نیٹو ہیڈکوارٹرز کے اسٹاف میں بھی ہلاکت خیز کرونا وائرس کی تصدیق ہوگئی، متاثرہ ممبر حال ہی بھی اٹلی سے آیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق چین سے دنیا بھر میں پھیلنے والے ہلاکت خیز کرونا وائرس سے اموات کا سلسلہ تاحال جاری ہے، مہلک وائرس برسلز میں واقع نیٹو کے ہیڈکوارٹرز بھی پہنچ گیا ہے۔

نیٹو نے جاری اعلامیے میں بتایا ہے کہ بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز میں واقع نیٹو ہیڈکوارٹرز کے ایک اسٹاف ممبر میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

نیٹو حکام کا اپنے اعلامیے میں بتایا کہ متاثرہ اسٹاف ممبر حال ہی میں اٹلی کے شمالی علاقوں میں چھٹیاں گزار کر واپس آیا تھا، متاثرہ ممبر نے اپنے گھر کو قرنطینہ بناتے ہوئے خود کو گھر میں محصور کرلیا ہے۔

نیٹوں حکام نے کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کےلیے اسٹاف ممبران کے سفر کرنے پر عارضی پابندی عائد کردی ہے جبکہ ممبران کو گھر سے ہی کام کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے گروپ کی صورت میں سفر بھی عارضی طور پر معطل کردیا ہے۔

خیال رہے کہ کرونا وائرس بیلجیئم میں 109 سے زائد افراد کو اپنا شکار بناچکا ہے۔

بیلجیئم میں مزید 59 شہریوں میں کرونا وائرس کی تصدیق

کرونا بے قابو، 103 ممالک لپیٹ میں، 107,420 متاثر، اٹلی میں 16 ملین لوگوں کا لاک ڈاؤن

چین کے بعد سب زیادہ اموات اٹلی میں ہوئیں، جہاں ہلاک افراد کی تعداد 233 ہو گئی۔ اٹلی کی سیاسی جماعت کے سربراہ نیکولا زنگریٹی میں بھی کرونا وائرس کی تصدیق ہو گئی۔

اٹلی نے ایک کروڑ ساٹھ لاکھ افراد کو قرنطینہ (الگ تھلگ) کرلیا ہے، اٹلی کے وزیر اعظم نے اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ 3 اپریل تک لمبارڈی اور دس دیگر علاقوں سے لوگ نہ باہر نکلیں گے نہ وہاں کوئی جائے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں