The news is by your side.

Advertisement

اٹلی، لاک ڈاؤن میں نرمی، سفری پابندیاں ختم

روم: اٹلی میں کورونا وائرس کی وبا تھمنے کے بعد حکومت نے سخت ترین لاک ڈاؤن میں نرمی کرتے ہوئے سفری پابندیوں اٹھانے کا اعلان کر دیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق اٹلی میں کورونا سے اموات کی تعداد میں مسلسل کمی آنے کے بعد معمولات زندگی کو بحال کرنے کے لیے حکومت نے لاک ڈاؤن کے تحت عائد پابندیوں کو بتدریج ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اطالوی وزیراعظم نے 3 جون سے اندرون و بیروملک سفر کی اجازت دینے کا فرمان جاری کر دیا ہے جب کہ حفاظتی تدابیر کے ساتھ18مئی سےدکانیں کھولنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

اطالوی وزیراعظم کا کہنا ہے کہ بتدریج معمول کی طرف لوٹنا چاہتے ہیں تاکہ کورونا کی دوسری لہر سےبچ سکیں، اس کے لیے احتیاطی تدابیر کو اختیار کرتے ہوئے بندشوں میں نرمی لائی جائے گی۔

اٹلی میں فروری سے جاری کورونا کی تباہ کاریوں کا سلسلہ مئی کے رواں میں تھمنا شروع ہوا تھا اور آج ریکارڈ کمی کے ساتھ صرف 159 اموات ریکارڈ کی گئیں جو کہ گزشتہ تین ماہ کے دوران ایک دن میں ہونے والی کم ترین اموات ہیں۔

اٹلی دنیا کا وہ تیسرا بڑا ملک ہے جہاں سب سے زیادہ اموات ہوئیں، اب تک مجموعی طور پر 31 ہزار 600 اموات کی تصدیق کی جاچکی ہے جو کہ امریکا اور برطانیہ کے بعد سب سے زیادہ اموات ہیں۔

اس سے قبل وزیر اعظم نے لاک ڈاؤن کے مثبت اثرات سامنے آنے کے بعد عوام کو خوش خبری سناتے ہوئے ملک بھر میں 4 مئی کے بعد سے لاک ڈاؤن میں نرمی کا اعلان کیا تھا۔

اُن کا کہنا تھا کہ ہم لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ کرچکے ہیں کیونکہ اب وبا تھمنا شروع ہوگئی ہے، ملک بھر میں تمام اسکول ستمبر میں ہی کھلیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ چار مئی کے بعد کاروباری مراکز خصوصاً مینوفیکچرنگ اور تعمیراتی شعبوں کو کام کرنے کی اجازت ہوگی۔ ایک ہفتے کی صورت حال کو دیکھنے کے بعد مزید بڑے فیصلے کیے جائیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں