The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس کی ایک اور خطرناک علامت کا انکشاف

ریاض: سعودی ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس نظام ہاضمہ پر بھی حملہ آور ہورہا ہے جس کے لیے مزید احتیاطی تدابیر اپنانے کی ضرورت ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی نیشنل ریسرچ سینٹر کے سابق سربراہ ڈاکٹر ہانی الناظر نے خبردار کیا ہے کہ کرونا وائرس ان دنوں نظام ہضم پر حملہ آور ہو رہا ہے۔ ڈاکٹر الناظر نے شہریوں کو اس حوالے سے وائرس کے منفی اثرات سے بچنے کے لیے متعدد مشورے دیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک پلیٹ میں کھانے سے پرہیز کریں، عام طور پر عرب ممالک میں ایک ہی پلیٹ میں فول کھایا جاتا ہے۔ موجودہ حالات میں عرب اپنی یہ عادت ترک کر دیں۔

علاوہ ازیں شیشہ پینے سے پرہیز کریں، دکانوں میں بیٹھ کر شیشے کا استعمال بند کردیں۔ کپڑوں کا تبادلہ نہ کریں۔

ڈاکٹر الناظر نے تاکید کی کہ سب لوگ وائرس سے بچاؤ کے لیے مقرر تدابیر کی پابندی کریں، ایسے کسی بھی شخص سے بات نہ کریں جو ماسک پہنے بغیر اونچی آواز میں بات کررہا ہو۔

انہوں نے کہا کہ سڑکوں پر فروخت کیے جانے والے مشروبات یا فاسٹ فوڈ بالکل نہ کھائیں۔ مصافحہ اور بغل گیر ہونے سے پرہیز کریں۔

ڈاکٹر ناظر نے توقع ظاہر کی کہ چند ماہ بعد کرونا وائرس کا زور ٹوٹ جائے گا اور آئندہ موسم سرما میں اس کی شدت کم ہوگی۔ ماسک کی پابندی ہر حال میں کریں کیونکہ یہ پہلی دفاعی لائن ہے۔ ماسک پہننے والے کو کرونا وائرس لگنا مشکل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں