The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس کی دوسری لہر، پی آئی اے کا پروازوں میں کھانے کے حوالے سے اہم قدم

کراچی: کرونا وائرس کی دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے پی آئی اے نے اندرون ملک جانے والی پروازوں میں کھانے کی فراہمی بند کر دی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کرونا کے پھیلاؤ کے خدشے کے تحت قومی ایئر لائن نے دوران پرواز کھانے کی فراہمی بند کر دی، مسافروں کو دی جانے والی کھانے پینے کی دیگر چیزوں کے مینیو میں بھی تبدیلی کر دی گئی۔

تمام پروازوں کے دوران گرم مشروبات پیش کرنے پر پابندی ہوگی، مسافروں کو پرواز میں پہلے سے بند ٹھنڈے مشروبات پیش کیے جائیں گے۔ترجمان پی آئی اے کے مطابق اندرون ملک پروازوں میں صرف ڈبے میں پیک اشیا اور ٹھنڈے مشروبات پیش کیے جائیں گے، ذرایع کے مطابق پی آئی اے کے چیف ایگزیکٹو ارشد ملک نے کھانے کی سروسز میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے۔

کھانے کے مینیو میں تبدیلی کا اطلاق فوری طور پر کر دیا گیا ہے، قومی ایئر لائن نے سعودی عرب سیکٹر کے لیے اسنیکس، کلب سینڈوچز، چکن پیٹیز، ایک کیلا اور مفن پیش کرنے جب کہ کافی یا چائے پیش نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سعودی سیکٹر سے واپسی کی پرواز پر کلب سینڈوچز، چکن پیٹیز، ایک کیلا اور بسکٹ پیش کیے جائیں گے، کابل اور خلیجی ممالک کی پروازوں میں صرف ہلکی پھلکی غذائیں یعنی اسنیکس پیش کیے جائیں گے۔

ترجمان پی آئی اے کا کہنا تھا کہ کھانے کی سروس میں تبدیلی حفاظتی اقدامات کے تحت مسافروں اور عملے کے ارکان کے درمیان رابطے کو کم کرنے کے لیے کی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں