The news is by your side.

Advertisement

سجاول: نہرپر پل نہ ہونے کی وجہ سے میت کی تدفین امتحان بن گئی

سجاول: نہرپر پل نہ ہونے کی وجہ سے میت کی تدفین امتحان بن گئی، چارسال کی بچی کا جنازہ المیے کی شکل اختیار کر گیا۔

تفصیلات کے مطابق سجاول کے علاقے چوہڑ جمالی میں افسوس ناک واقعہ پیش آیا ہے، چار سالہ  شہزادی بنت غلام مصطفیٰ کونجائی کی میت کو نہر کے پار لے جانے کے لیے لواحقین کو تھرموپول استعمال کرنا پڑا.

اس افسوس ناک واقعے کی ویڈیو وائرل ہوگئی، جس پر سوشل میڈیا پر شدید ردعمل آیا.

یاد رہے کہ ایک سال پہلے بھی ایک ایسا ہی جنازہ نہرسے گزرا تھا، یہ خبر میڈیا کی زینت بنی، تو حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا.

اس واقعے کے بعد وزیراعلیٰ سندھ نے نہر پر پل بنانےکاوعدہ کیا تھا، لیکن یہ وعدہ پورا نہ ہوا.

واقعے پر ردعمل دیتے ہوئے نصرت سحرعباسی نے کہا ہے کہ سندھ نےصرف کتابوں میں ترقی کی ہے.

پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان کا کہنا ہے کہ جب تک ان کا اپنا کوئی نہیں مرے گا، سندھ میں ترقیاتی کام نہیں ہوگا.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں