The news is by your side.

Advertisement

میاں بیوی نے مہنگے کروز شپ پر رہنے کا فیصلہ کیوں کیا ؟ دلچسپ وجہ سامنے آگئی

پرتعیش مسافر بردار بحری جہاز (کروز شپ) پر کچھ وقت گزارنا کسی مہنگے شوق سے کم نہیں لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جو اپنی زندگی کے کچھ لمحے یادگار بنانے کیلئے اپنی جمع پُونجی تک داؤ پر لگا دیتے ہیں۔

امریکہ سے تعلق رکھنے والے ایسے ہی میاں بیوی رچرڈ اور اینجلین برک ہیں جنہوں نے اپنی ملازمتوں سے ریٹائرمنٹ کے بعد باقی زندگی کروز شپ پر گزارنے کا فیصلہ کیا جس کے لیے انہوں اپنا گھر تک بیچ دیا۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق انجلین برک جو پیشے کے لحاظ سے ایک سابق اکاؤنٹنٹ ہیں نے کروز شپ پر رہنے کے یومیہ اخراجات کا حساب لگایا۔

جس کے بعد یہ بات سامنے آئی کہ کروز شپ پر رہنے کا یومیہ خرچ 35پاؤنڈ ہے اس کے علاوہ وہاں کھانے پینے کے اخراجات بھی اسی میں شامل تھے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ہمیں سفر کرنا پسند ہے اور ہم اپنی ریٹائرمنٹ کے بعد مسلسل سفر کرنے کا ایک ایسا طریقہ تلاش کر رہے تھے جس سے مالی لحاظ سے بھی فائدہ ہو۔

میاں بیوی کا کہنا تھا کہ وہ خشکی پر اپنا وقت کم ہی گزارتے ہیں لیکن جب وہ کروز سے باہر ہوتے ہیں تو زیادہ تر وقت اپنے رشتہ داروں اور دوستوں کے ساتھ گزارتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق یہ جوڑا اب تک اٹلی، آئس لینڈ اور سنگا پورکی سیر کرچکا ہے اور اب ان کی اگلی منزل آسٹریلیا ہے جہاں وہ زندگی کو بھرپور طریقے سے انجوائے کریں گے۔

رچرڈ نے کہا کہ ہمارا اصل منصوبہ یہ تھا کہ ہم ایک ماہ تک مختلف ممالک میں رہیں گے اور عمر کے اس آخری حصے میں کچھ ایسا کریں گے کہ جسے مرتے دم تک یاد رکھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں