The news is by your side.

Advertisement

پوری دنیا کو ویکسین کب تک لگ سکتی ہے؟

ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کی مناسب تقسیم ہو تو سنہ 2022 تک دنیا بھر کی آبادی کو ویکسین لگ سکتی ہے، تاہم ویکسین کی 12 ارب میں سے 9 ارب ڈوزز مغربی ممالک پہلے ہی اپنے لیے مختص کرچکے ہیں۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق معروف بین الاقوامی ہیلتھ کیئر ماہرین نے ایک ورچوئل سیشن سے خطاب کرتے ہوئے دنیا بھر میں ویکسی نیشن کے یکساں مواقعوں کی فراہمی پر زور دیا۔

عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ ویکسین کی 12 ارب میں سے 9 ارب ڈوزز مغربی ممالک نے مختص کرلی ہیں، ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر دنیا میں ویکسین کی مناسب تقسیم ہو تو سنہ 2022 تک عالمی سطح پر ویکسی نیشن کا مناسب امکان ہے۔

سیشن کے شرکا میں سینی گال کے صدر میکی سال، ڈی پی ورلڈ کے گروپ چیئرمین اور سی ای او سلطان احمد بن سلیم، یونیسیف کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر ہینرئیٹا ہولسمین فور اور عالمی ادارہ صحت کے کرونا وائرس سے متعلق خصوصی ایلچی ڈاکٹر ڈیوڈ نابارو شامل تھے۔

شرکا نے اس امید کا اظہار کیا کہ ہر کسی کو ویکسین تک یکساں رسائی حاصل ہونی چاہیئے جس کے بعد ہی سنہ 2022 تک سب کو ویکسی نیشن کے مقاصد حاصل کیے جا سکتے ہیں۔

شرکا کے مطابق جب عالمی سطح پر خسرہ، پولیو، ایبولا اور سارس جیسی بیماریوں کے خلاف کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے تو کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے بھی وہی طریقہ کار اختیار کیوں نہیں کیا جاسکتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں